Sign in to follow this  
lukyryk

SEXY SARA

Recommended Posts


یہ کہانی ترجمعہ شدہ ہے امید ہے آپکو پسند آئے گی یہ داستان ہے ایک ایسے مصنف کی جو خود بھی سکسی اسٹوریز ویب سائٹ کے لیے لکھتا تھا اس کے ساتھ کیسے پیش آیا یہ پڑھنا دلچسپی سے خالی نہ ہو گا۔ اپنی رائے ضرور دیجئے گا۔ اب آپ کہانی سے لطف اندوز ہوں
واقعہ تحریر کرنے سے قبل میں یہ بات بتانا ضروری سمجھتا ہوں کہ مجھے ہر روز درجنوں کے حساب سے ای میلز موصول ہوتی ہیں جن میں میری تحریروں کے حوالے سے قارئین کی طرف سے آراءہوتی ہیں بعض ای میلز میں مجھ سے لڑکیوں کے ٹیلی فون نمبر بھی مانگے گئے ہوتے ہیں لیکن میں ایک اخلاقی تقاضے کی وجہ سے ایسے لوگوں سے معذرت کرلیتا ہوں جو مجھ سے ٹیلی فون نمبر مانگتے ہیں تین ماہ قبل ایک روز میں نے اپنا ای میل آئی ڈی کھولا تو مجھے بہت ساری ای میلز آئی ہوئی تھیں جن کا حسب سابق میں نے جواب دیا اس دوران میں نے ایک میل کھولی جس کا مضمون میں اپنے الفاظ میں ذیل میں لکھ رہا ہوں
ڈیئر فراز
میں نے آپ کی کہان یاں مختلف ویب سائٹس پر پڑھی ہیں جس سے مجھے آپ کی سیکس اورسکسی لڑکیوں کو پٹان ے کی صلاحیتوں کا ان دازہ ہوگیا ہے میں آپ سے ایک مدد کا طلب گار ہوں اگر آپ میری مدد کردیں تو میں آپ کا بہت مشکور ہوں گااگر آپ میری مدد کے لئے راضی ہیں تو مجھے فوراً رپلائی کریں
کامران
یہ ساری ای میل انگلش میں تھی جس کو میں نے اپنے الفاظ میں آپ کے سامنے پیش کیا ہے میں نے اس میل کے جواب میں رپلائی کیا کہ آپ کس قسم کی مدد چاہتے ہیں جس پر مجھے اسی دن میل موصول ہوئی جس کا مضمون پڑھ کر میں بڑا شاکڈ ہوا اس کامضمون بھی میں اپنے الفاظ میں ذیل میں تحریر کررہا ہوں
ڈیئر فراز
میں آپ کا بہت شکرگذار ہوں کہ آپ نے میری میل کا جواب دیا میرا مسئلہ یہ ہے کہ میری عمر اس وقت بائیس سال کے قریب ہے اور میں ڈی ایچ اے لاہور میں رہتا ہوں میری ایک چھوٹی بہن سارا (اس نے اپنی میل میں اس کا نام اصل لکھا تھا میں اس تحریر میں اس کو تبدیل کرکے فرضی نام لکھ رہا ہوں )ہے جس کی عمربیس سال ہے سالی ہے بہت پٹاخہ ہے سکسی فل مست (اس نے اپنی میل میں لفظ سالی اور پٹاخہ کا ذکر بھی کیا تھا) اس کا سکسی فگر بھی بہت کمال کا ہے

میرا دل کرتا ہے کہ اس سکسی بہن کے ساتھ سیکس کروں لیکن وہ سکسی مست سالی ہاتھ میں نہیں آرہی کیا آپ میری مدد کرسکتے ہیں آپ چاہیں تو اس کو خود پھنسا کر اس کے ساتھ سیکس کریں اور بعد میں مجھے سیکس کا موقع فراہم کریں میں اس کو پھنسانے میں آپ کی بھرپور مدد کروں گا مجھے امید ہے کہ آپ اس کام میں میری مدد کرسکتے ہیں اگر آپ اس حوالے سے میری مدد نہ کرنا چاہیں تو مہربان فرما کر مجھے کوئی ایسا لڑکا بتادیں جو میرا یہ کام کرسکے لیکن لڑکا بھروسے والا ہونا چاہئے
کامران
موبائل فون نمبر

 

میں یہ  سکسی سی میل پڑھ کر اس کو مذاق سمجھا لیکن میں نے اس میل کا جواب دیا کہ میں یہ کام کرنے کے لئل میں اپنا فون نمبر بھی لکھ دیا اگلے روز مجھے شام کے وقت ایک فون آیا کال کرنے والے نے اپنا نام کامران بتایا میں نے پوچھاے تیار ہوں لیکن آپ کو پہلے مجھے خود ملنا ہوگامیں نے می کہ کون کامران اس نے اپنی اور میری میل کا حوالہ دیا تو میں اس کو پہچان  گیا

 

اس نے کہا کہ آپ نے میل میں ملنے کے لئے کہا اس لئے فون کیا میں نے اس کو اسی روز رات کو آٹھ بجے کینٹ میں ملنے کے لئے بلا لیا ہماری ملاقات کینٹ کے ایک ریسٹورنٹ میں ہوئی جہاں اس نے اپنے کام کے حوالے سے مجھے ایک بار پھر تفصیل سے آگاہ کیا اس نے بتایا کہ اس کی  سکسی بہن اپنے موبائل سے گھنٹہ گھنٹہ اپنے دوستوں کے ساتھ باتیں کرتی رہتی ہے مجھے یقین ہے کہ وہ کسی نہ کسی لڑکے کے ساتھ سیٹ ضرور ہوگی  پر ابھی تک کنواری ہے

 

اور ممکن ہے جلد سیل تڑوا لے وہ سکسی اب مزید چوت کی چدائی کرائے بنا نہیں رہ پائے گی  کیونکہ ننگی فلمیں بھی آج کل بہت دیکھ رہی ہے میرا بہت دل کرتا ہے کہ میں اس کے ساتھ سیکس کروں لیکن میری ہمت نہیں پڑتی آپ اس کو خود سیٹ کرکے اس کے ساتھ سیکس کریں اور اس کے بعد مجھے بھی اس میں شامل کرلیں اس نے اپنی سکسی  بہن کافون نمبر بھی مجھے اسی وقت دے دیا

 

میں نے اس کے سامنے ہی اپنے فون سے اس کو فون کیا تو کسی لڑکی نے ہی فون اٹھایا اس کی آواز واقعی بہت سکسی تھی لیکن وہ ہیلو ہیلو کرتی رہی میں نے کوئی بات نہ کی اور فون بند کردیا اس وقت میں سمجھا کہ شائد یہ اس کی  سکسی بہن نہ ہو یہ کسی اور سکسی لڑکی کا فون نمبر دے رہا ہوگا میں نے کامران سے کہا کہ میں اس کا کام کردوں گا لیکن اس کے لئے اسے پہلے میری اپنی  سکسی بہن کے ساتھ ایک ملاقات کرواناہوگی

 

اس نے کہا کہ وہ ایسے کیسے کرسکتا ہے میں نے اس کو ملاقات کرنے کا طریقہ بتایا کہ وہ اپنی بہن کے ساتھ ایک آدھ دن میں کہیں باہر ہوٹل پر کھانا کھانے کا پروگرام بنائے جہاں میں بھی پہنچ جاں اور وہاں وہ مجھے بھی کھانے کے لئے دعوت دے جہاں میں اس کی  سکسی بہن سے تھوڑی بہت بات چیت کرکے اس کو تھوڑا ساسمجھ لوں تو اس نے کہا کہ کھانےے پر تو نہیں میں اسے آئس کریم کھلانے کے لئے باہر لاسکتا ہوں

 

جہاں آپ مل لیں اس کام کے لئے اگلے روز رات آٹھ بجے کا ٹائم طے ہوگیااسی وقت یہ بھی طے پایا کہ وہ اس ملاقات کے دوران  ہی کوئی کام کا بہانہ کرکے نکل جائے اور سارا کو میں ان  کے گھر تک ڈراپ کروں جس پر وہ راضی ہوگیا حسب پروگرام اگلے روز ڈیفنس میں ایک آئس کریم پارلر پر میری کامران اور سارا سے ملاقات ہوگئی

 

سارا واقعی بہت سکسی تھی گورے رنگ کی پانچ فٹ آٹھ انچ قد کی مالک سارا کے بال کمر تک لمبے تھے بڑی بڑی شربتی کٹورے  آنکھیں تھیں ٹریک سوٹ میں ملبوس اس لڑکی کے جسم کے خدوخال اس وقت تو واضح نہیں ہورہے تھے لیکن وہ سکسی اس وقت بھی کسی جوان  مرد کو شہوت دلانےکے لئے کافی تھی ملاقات چوں کہ طے شدہ تھی پروگرام کے مطابق دونوں آئس کریم پارلر میں بیٹھے تھے

 

انہوں نے ابھی آرڈر دینا تھا کہ میں پہنچ گیا ہیلو کاشی تم یہاں ہیلو فراز کیسے ہو آ بیٹھو نا ہم لوگ آئس کریم کھانےآئے تھےمیں اس کے کہنے پر ان  کے ٹیبل پر ہی ایک کرسی پر بیٹھ گیا کامران کے ساتھ رسمی بات چیت ہوئی اس دوران  اس نے اپنی  سکسی بہن سارا کا تعارف بھی کرایا اور تینوں کے لئے آ ئس کریم کا آرڈر بھی دے دیا ہم تینوں آئس کریم کھارہے تھے کہ اچانک کامران کے فون پر بیل ہوئی

 

اور وہ یہ کہنے لگا  نہیں نہیں یار میں ابھی نہیں آسکتا ابھی میں کچھ دیر کے لئے مصروف ہوں آدھ پون گھنٹہ تک فارغ ہوکے آتا ہوں یار میری بات سمجھنے کی کوشش کروں میں اس وقت گھروالوں کے ساتھ مصروف ہوں مجھے ابھی ان  کو گھر ڈراپ کرنا ہے اوکے یار کوشش کرتا ہوںفون بند کرکے مجھ سے مخاطب ہوا یار فراز مجھے کسی کام کے سلسلہ میں ایک دوست کی طرف ضروری جاناہے تم آئس کریم کھا اور ہاں یار سارا کو جاتے ہوئے گھر ڈراپ کردینا



اور ہاں سارا تم نے جو چیزیں لینی ہے فراز صاحب کے ساتھ ہی جاکر لے لینا اچھامیں چلتا ہوں یہ کہہ کر وہ کسی کی بات سنے بغیر ہی آئس کریم پارلر سے نکل گیا  سکسی سارا شائد اس لمحے کے لئے تیار نہیں تھی اس کا منہ تکتی ہی رہ گئی وہ شائد اس سے کچھ کہنا چاہتی تھی لیکن کامران نے کچھ کہنے کا موقع ہی نہیں دیا اور نکل گیا کامران کے جانےکے بعد میں نے سارا سے کہا کہ آپ فکر نہ کریں میں آپ کو ڈراپ کردوں گا
بات یہ نہیں کہ مجھے گھر کون ڈراپ کرے گا مجھے بازار سے کچھ چیزیں لینی ہیں اور پیسے بھی کامران کے پاس ہیں  سکسی سارا نے فکر مندی سے کہا کوئی بات نہیں اگر زیادہ پیسوں کی ضرورت ہے تو پہلے آپ کے گھر چلتے ہیں اگر کچھ کم رقم سے کام چلتا ہے تو میرے پاس بھی تھوڑی سی رقم ہے نہیں کوئی بات نہیں میں گھر سے پھر آجا
ں گی

ابو کے ساتھ جیسے آپ کی مرضی اس کے وہ آہستہ آہستہ آئس کریم کھاتی رہی میں آئس کریم کھاتے ہوئے بھی اس سکسی کے بارے میں سوچ رہا تھا اور اس کے سکسی جسم کا جائزہ لے رہا تھا آئس کریم کھانےکے بعد میں نے بل دیا اور ہم پارلر سے باہر آگئے جہاں میری گاڑی میں ہم دونوں بیٹھے اور ان  کے گھر کی طرف روانہ ہوگئے میں نے اس سے کہا کہ مجھے راستے کا نہیںمعلوم  پلیز بتادیجیئے گا جس پر وہ مجھے راستے کے بارے میں بھی بتاتی گئی راستے میں ہماری جو بات چیت ہوئی وہ کچھ اس طرح سے تھی

 

آپ کیا کرتی ہیں میں لمز سے ایم بی اے کررہی ہوں جی آپ کے بارے میں کامران کافی بار بتا چکا ہے آپ کیا کرتے ہیں میں ایک سرکاری محکمہ محکمہ کا نام لے کر میں کام کرتا ہوں پھر تو آپ بہت کام کے بندے ہوئے آپ سے تو کام کروائے جاسکتے ہیں جی آپ کام بتائیں اگر کرنے کے قابل ہوئے تو ضرور کریں گے کامران نے آپ کے بارے میں کبھی بات نہیں کی وہ اکثر اپنے دوستوں کے بارے میں بات چیت کرتا رہتا ہے

 

بلکہ اس کے اکثر دوست تو ہمارے گھر بھی آچکے ہیں بہت غلط آدمی ہے کامران بھی کہ میرا کوئی ذکر ہی نہیں اس کے دوستوں میں مجھے مل لینے دیں پھر پوچھتا ہوں اس سے میری بات سن کر  سکسی سارا کھلکھلا کر ہنسنے لگی اور رہا سوال گھر آنے کا تو اس نے کبھی دعوت ہی نہیں دی چلیں آج میں آپ کو اپنے گھر لے چلتی ہوں تھینک یو  ابھی ادھر ادھر کی باتیں چل رہی تھیں کہ اس سکسی   کا گھر آگیا

 

میں نے گیٹ کے سامنے گاڑی روکی تو  سکسی سارا زبردستی مجھے اندرلے گئی جہاں جاکر اس نے مجھے ٹھنڈا یا گرم کا پوچھا میں نے اس سے کہا کہ چائے لیکن اگر آپ اپنے ہاتھ سے بنائیں تو جس پر وہ چائے بنانے کچن میں چلی گئی چائے لے کر آئی  کپ کے اوپر بھی سکسی سی تصویر بنی تھی میں نے چائے کا ایک گھونٹ لیا تو چائے اس قابل نہیں تھی کہ اس کو پیا جائے لیکن میں نے پھر بھی موقع کی مناسبت سے اپنے کمان  سے پہلا تیر چھوڑ دیا



چائے تو آپ نے اپنے جیسی ہی بنائی ہے کیا ٹھیک نہیں بنی منہ بسورتے ہوئے کہنے لگی نہیں نہیں میں یہ تو نہیں کہہ رہا اور کیا میں آپ کو برا کہہ سکتا ہوں آپ تو مجھے بہت اچھی لگی ہیں کم از کم کامران سے تو بہتر ہیں اگر ممکن ہوتا تو میں کامران سے دوستی ختم کرکے آپ سے کرلیتا اس کے لئے آپ کو کامران سے دوستی ختم کرنے کی ضرورت نہیں ہے کامران کے تمام فرینڈز ہمارے فیملی فرینڈز ہیں
چائے کے دوران   اس سکسی سے گپ شپ جاری رہی  میری عقابی نظریں اس کی بھرے بھرے چکنے جوان سکسی بدن پہ تھیں اور میں اپنی توقع سے زیادہ کامیابی حاصل کرچکا تھا چائے ختم کرکے میں نے اجازت چاہی تو سارا نے کہا کہ آپ کو ابھی اجازت نہیں مل سکتی کیوں کہ ماما پاپا گاڑی لے کر کہیں گئے ہوئے ہیں اور مجھے لبرٹی سے ایک بک ابھی خریدنی ہے آپ کو تکلیف تو ہوگی لیکن ابھی کیا کیا جاسکتا ہے

کامران کے دوست ہونے کا اتنا تو نقصان  آپ کو برداشت کرنا پڑے گا مجھے اور کیا چاہئے تھا میں نے فوراً حامی بھر لی لبرٹی جاتے اور آتے ہوئے ہم دونوں آپس میں کافی حد تک فرینک ہوگئے ہم دونوں کی بات چیت پسند نہ پسند اور گھر کے افراد اور دوستوں تک چلی گئی میں نے اس کو واپسی پر گھر ڈراپ کرتے ہوئے اپنے گھر میں آنے کی دعوت بھی دے دی جس پر اس نے حامی بھری کہ وہ آئندہ اتوار کو کامران کے ساتھ میرے گھر ضرور چکر لگائے گی

 

اس روز ہم لوگ کھانااکھٹے کھائیں گے اس کو چھوڑ کر میں واپس اپنے گھر آگیا اور رات گئے تک  سکسی سارا اور اس کے بھائی کے بارے میں کافی سوچتا رہا کئی خیالات ذہن میں آئے لیکن آخر کار میں نے یہی فیصلہ کیا کہ جو ہوگا دیکھا جاےءگا پہلے جو کام کرنے کا سوچا ہے اس کو تو پورا کیا جائے اس سے اگلے روز کامران سے فون پر بات ہوئی اور پروگرام طے ہوا کہ سنڈے کو وہ  سپنی سکسی بہن کے ساتھ میرے گھر آئیں گے

 

اور حسب سابق وہ پھر سکسی سارا کو میرے گھر چھوڑ کر چلا جائے گا اور اسی روز میں اس کے ساتھ سیکس کرلوں گا پروگرام کے مطابق سنڈے کو شام پانچ بجے کے قریب کامران میرے بتائے ہوئے ایڈریس پر میرے گھر آگیا میں نے ان  کو چائے وغیرہ پلائی اور پروگرام کے مطابق کامران کو پھر فون آگیا اوروہ پھر چلا گیا  سکسی بہن  نے اس کو بہت روکا لیکن اس کا پروگرام تو پہلے سے طے تھا وہ کہاں رکنے والا تھا سو چلا گیا

 

اس کے جانے کے بعد سارا نے بھی کہا کہ اسے گھر ڈراپ کردیں لیکن میں نے اس کو کہا کہ تم نے کھانے کا وعدہ کیا تھا میں نے ان تظام کررکھا ہے لہذا اسےکھانا کھانا ہی پڑے گا تو کہنے لگی کہ ابھی تو کھانےکے وقت میں کافی ٹائم ہے تو میں نے کہا کہ اتنی دیر لڈو کھیل لیتے ہیں شائد کامران بھی اتنی دیر میں واپس آجائے جس پر اس نے حامی بھر لی ہم دونوں لڈو کھیلنے لگے

 

اس دوران  ہمارے درمیان  سیکس کے علاوہ تقریباً ہر موضوع پر بات ہوئی شام سات بجے تک کامران نہ آیا تو میں نے سکسی سارا سے کہا کہ کامران تو نہیں آیا آ کہیں باہر چلتے ہیں آٹنگ بھی ہوجائے گی اور کھانےکا وقت بھی اگر کامران آگیا تو وہ فون کرلے گا اس نے حامی بھر لی اور ہم دونوں لانگ ڈرائیو پر نکل گئے ساڑھے آٹھ بجے کے قریب واپس آئے مگر کامران نہ آیا

 

اس کو فون کیا تو کہنے لگا ابھی مصروف ہے اگر رات گیارہ بجے تک ویٹ کرسکتے ہوتو کرلو ورنہ کھاناکھالو سو ہم دونوں نے کھاناکھالیا جس کے بعد وہ واپسی کے لئے کہنے لگی جس پر میں نے اس دن سیکس کا پروگرام کینسل کرکے اس کو گھر ڈراپ کردیا راستے میں اس نے مجھے کھانےکی دعوت دی تو میں نے اس کو کہا کہ میں اس شرط پر دعوت قبول کروں گا اگر وہ خود کھاناپکائے گی

 

اس نے کہا کہ اسے کھاناپکانانہیں آتا جس پر میں نے کہا کہ ٹھیک ہے لیکن ہوٹل میری مرضی کا ہوگا جس پر اس نے حامی بھر لی اس موقع پر یہ بھی طے ہوا کہ کامران کو ہر بار کوئی نہ کوئی کام یاد آجاتا ہے اس لئے اگلی بار ملاقات میں وہ شامل نہیں ہوگا دعوت اگلے سنڈے کے لئے طے ہوئی اس موقع پر  سکسی سارا نے میرا فون نمبر بھی لے لیا اور اگلے روز مجھے فون کرکے پروگرام کے حتمی ہونے کے بارے میں پوچھا

میں نے پروگرام میں تھوڑی سی تبدیلی کی اور اسے کہا کہ دعوت اسی کی طرف سے ہوگی لیکن ہم لوگ کھانالے کر میرے گھر آجائیں گے جہاں کچھ دیر گپ شپ بھی ہوگی اور کھانابھی کھائیں گے جس پر اس نے رضامندی ظاہر کردی اسی شام کامران کا مجھے فون آیا اور کہنے لگا باس کیا بنا میں نے اس کو بتایاکہ ابھی نہیں شائد اس کام میں کچھ دن لگیں گے تو کہنے لگا باس جلدی کرو

 

آپ کا اتنا تجربہ ہے اور میری سکسی بہن ابھی تک پٹا نہیں سکے میں نے کہا کہ ٹھیک ہے اگلے سنڈے تک روزانہ اس کا فون آتا اور دعوت سے بات شروع ہوکر دیگر کئی موضوعات پر بات ہوتی ہفتہ کے روز اس کافون آیا تو میں نے باتوں باتوںمیں اس سکسی حسینہ سے کہا کہ وہ مجھے اچھی لگتی ہے جس پر اس نے بات یہ کہہ کر ٹال دی کہ میں تو ہر کسی کو اچھی لگتی ہوں خیر فون پر بات آگے نہ بڑھ سکی

 

لیکن میں نے یہ بات اس کے کانوں تک پہنچا دی کہ میں اس کو کس نظر سے دیکھتا ہوں خیر اگلے روز شام چار بجے کے قریب اس کا فون آیا اور اس نے کہا کہ اسے گھر سے پک کرلیں گھر میں گاڑی کوئی نہیں ہے میں نے آدھ گھنٹے بعد اس کو گھر سے پک کیا آج اس نے سرخ رنگ کی کڑھائی والی قمیص اور بلیک کلر کی سکسی شلوار پہنی ہوئی تھی گلے میں سفید کلر کا دوپٹہ بال کھلے ہوئے ہلکا سا میک اپ وہ سکسی  قیامت ڈھا رہی تھی

 

گاڑی میں بیٹھتے ہی میں نے اس سے کہا کہ آج تو شہر میں تمام لڑکے پاگل ہوجائیں گے جن  میں میں بھی شامل ہوں تو وہ تھوڑا سا شرما گئی میں اسے لے کر سیدھا گھر چلا گیا جہاں جاکر وہ کہنے لگی کہ آج بھی لڈو کھیلتے ہیں میں نے کہا کہ آج لڈو شرط لگا کر کھیلی جائے گی تو کہنے لگی کیا شرط جس پر میں نے پروین  کا یہ شعر پڑھ دیااس شرط پہ کھیلو گی پیا پیار کی بازی جیتوں تو تجھے پاں ہاروںتو  پیا تیری

 

جس پر وہ  سکسی مسکرا کر رہ گئی مگر بولی کچھ نہیں خیر لڈو بچھ گئی میں نے کھیلنا کیا تھا اسی کو ہی تکتا رہا ایک ڈیڑھ گھنٹہ کھیلتے رہے ہر بازی ہی وہ جیتی آخر کہنے لگی فراز صاحب آپ کے پاس میوزک کی کوئی سی ڈیز نہیں ہیں میں نے اس کو کہا کہ تم میوزک سننا چاہتی ہو تو کمپیوٹر میں اپنی پسند کے گان ے لگا لو میں واش روم سے ہوکر آیا یہ کہہ کر میں ڈرائینگ روم سے نکل گیا واپس آیا تو وہ  سکسی لیپ ٹاپ کے سامنے بیٹھی ہوئی تھی

 

اور لیپ ٹاپ کی سکرین پر ایک بلیو فلم چل رہی تھی جس کو وہ اتنے غور سے یکھ رہی تھی کہ اسے میرے آنے کی خبر بھی نہ ہوئی میں دل ہی دل میں سوچا کہ تمام دروازے خود بخود کھلتے جارہے ہیں میں چپ چاپ اس کے پیچھے آکر کھڑا ہوگیا

قریباً پانچ منٹ بعد بلیو فلم کا یہ کلپ ختم ہوا تو میں نے اس  سکسی کے کندھے پر ہاتھ رکھ دیا جس پر وہ چونک اٹھی مجھے اپنے پیچھے پاکر جیسے اس کی سیٹی گم ہوگئی اس کے حلق سے آواز نہیں نکل رہی تھی وہ میں تو  یہ خود بخود چل گئی  میں تو  میوزک کی فائل ڈھونڈ رہی تھی میں نے اس کی کوئی بات سنے بغیر اس کو کرسی سے اٹھایا اور اپنا ایک ہاتھ اس کی گردن کے پیچھے سے گزار کر اس کو اس طرح پکڑ لیا کہ وہ ہل نہ پائے

 

اور اس کے  سکسی ہونٹوں پر اپنے ہونٹ رکھ دیئے وہ کچھ بولی اور نہ ہی کوئی مزاحمت کی شائد بلیو فلم کا کلپ دیکھ کر وہ ہاٹ ہوچکی تھی اس نے اپنی آنکھیں بند کرلیں میں اس کے رسیلے ہونٹ چوس رہا تھا اور اس نے اپنا سارا وزن میرے اوپر ڈال دیا میں نے اس کو سنبھالے رکھا اور اس کے ہونٹ چوستا رہا چند لمحے بعد اس نے بھی میرا ساتھ دینا شروع کردیا میں نے اس کے ہونٹوں سے اپنے ہونٹ ہٹا کر اس کی گردن پر رکھ دیئے

 

پھر کانوں کے گرد اپنی زبان  پھیرنے لگا جیسے ہی میں نے اپنی زبان  سے اس کے کان  چھوئے اس نے ایک جھرجھری سی لی اور اس کے منہ سے ایک آہ نکل گئی اس کاسارا وزن میرے اوپر ہی تھا میرے اسے چھوڑ دیتا تو وہ گر جاتی میں نے پھر اس کے ہونٹ اپنے ہونٹوں میں لے لئے اس نے اپنے دونوں ہاتھ میرے سر کے اوپر رکھ لئے اور میرے بالوں کو کھینچنے لگی

 

میں نے چند منٹ تک ایسے ہی کھڑے کھڑے اس کی کسنگ کی پھر اس کولے کر صوفے پرآگیا جہاں میں نے پھر اس کو کسنگ شروع کردی یہاں بھی وہ  سکسی میرا بھرپور ساتھ دے رہی تھی میں نے ایک ہاتھ اس کی قمیض کے نیچے سے ڈال کر اس کا سکسی بوبز  پکڑنے کی کوشش کی تو اس نے اپنے ہاتھ سے میرا ہاتھ روک لیا لیکن میں نے قیض کے اوپر سے ہی اس کا ایک سکسی بوبز  پکڑ کر دباناشروع کردیا

 

جس پر اس کے منہ سے سکسی سی اوئی ئی ئی کی آواز نکلی لیکن میں نے یہ آوازاس کے منہ پر اپنے ہونٹ رکھ کر دبا دی پھر میں نے اس کی قیض اوپر کی اس بار بھی اس نے مزاحمت کی لیکن میں باز نہ آیا تو اس نے مزاحمت ترک کردی اور میں نے اس کی قیض اتار کر صوفے کے اوپر رکھ دی پھر اس کا برا اور شلوار بھی اتار دی شلوار اتارتے ہوئے اس نے ایک بار پھر مجھے منع کرنے کی کوشش کی

 

لیکن ناکام رہی اب وہ  سکسی حسینہ میرے سامنے ننگی کھڑی ہوئی تھی میں نے بھی اپنے شرٹ اور ٹرازر اتار دیا میرا لن پوری طرح کھڑا ہوا تھا جس کو دیکھ کر اس نے اپنی زبان  اپنے دانتوں تلے دبا لی اور چند سکینڈ تک اسے حیرت سے دیکھتی رہی اس کا جسم واقعی بہت کمال کا ت سکسی تھا

 

اس کی ناف دیکھنے والی تھی کمال کی خوبصورت تنے ہوئے چربی اور فالتو گوشت سے پاک پیٹ  کے اوپر سکسی  سا ہول الف کی چکل کی ناف جو اندر کو دھنسی ہوئی تھی اور اس کی گہرائی میں جا کے میں نے اپنی زبان پھیری  کوئی آدھ انچ گہری لمبی ناف غضب ڈھا رہی تھی ایسی ناف مجھے کبھی کبھی نظر آتی ہے اور جب نظر آجائے میں اپنے آپ پہ کنٹرول نہیں رکھ پاتا

 

اب یہ سب کچھ اس  سکسی کی برداشت سے باہر ہورہا تھااس نے اپنی ٹانگیں سکیڑ لیں اور مجھے بار بار بالوں سے پکڑ کر میرا منہ پیچھے کررہی تھی وہ بدستور آہ ہ ہ ہ ہ ہ اف ف ف ف ف کی آوازیں نکال رہی تھی  میرا اندازہ تھا کہ اس نے کئی ایک ننگی انگریزی فلمیں دیکھ رکھی تھیں اس کو اس طرح سے سکسی آوازیں نکلانا بھی اچھا لگ رہا تھا اب میں سمجھ گیا کہ لوہا گرم ہوچکا ہے اب چوٹ مار دینی چاہئے

 

اب میں اس کی ٹانگوں کے درمیان  آگیا اور اس کی ٹانگیں پکڑ کر اپنے کولہوں پر رکھ لیں وہ بھی میرا  بڑا مست لن لینے کےلئے بالکل تیار ہوچکی تھی اس کی آنکھیں ابھی تک بند تھیں میں نے اپنے لن کو پکڑ کر اس کی  جوان گرم گرم سکسی پھدی پر رگڑنا شروع کردیا جو پہلے ہی کافی حد تک گیلی ہوچکی تھی اس کام سے مزید لیس دار ہوگئی اب میں نے اپنا لن اس کی پھدی کے سوراخ پر فٹ کیا

 

اور اس کے ہونٹوں پر اپنے ہونٹ رکھ دیئے  میں اب اس کے رسیلے ہونٹ بھی ساتھ ساتھ چوس رہا تھا اور دھیرے دھیرے اس کی سکسی پھدی پہ لن بھی رگڑ رہا تھا وہ مست ہوئی جا رہی تھی اور ایک آہستہ سا جھٹکا دیا لیکن میرا لن اس کی پھدی کے اندرنہ گیا  کنواری پھدی کے اندر لن سارا ایک دم سے نہیں جاتا اگر ڈالے بھی جائے تو پہلے جھٹکے میں آدھا جاتا ہے اور درد سے عورت مرنے والی ہو جاتی ہے

 

اس کے منہ سے ہلکی سی درد والی سسکاری  کی آواز نکلی کیونکہ میرے ہونٹ اس کے ہونٹوں پر تھے لیکن مجھے محسوس ہوا جیسے کہ اسے تھوڑی سی درد محسوس ہوئی ہے اسی اثناءمیں میں نے زور سے ایک اور گھسا دیا اور میرے لن کا ٹوپا اس کی پھدی کے اندرچلا گیا اس کے منہ سے غوںںںںںں کی ایک آواز آئی جو میرے منہ کے اندرہی رہ گئی اس نے اپنے ہاتھوں سے میری کمر کو پکڑا اور مجھے پیچھے کرنے کی کوشش کی

 

لن کا ہیڈ اس کی سکسی کنواری پھدی میں پھنسا ہوا تھا لیکن اسی دوران  میں نے ایک اور جھٹکا دے دیا اور میرا آدھا لن اس کی پھدی میں چلا گیا میں نے اپنے ہونٹ اس کے منہ سے نہ ہٹائے مگر اس کے ناک سے غوں ںںںں کی ایک اور آواز نکلی اور اس نے پھر سے مجھے ہٹانےکی کوشش کی لیکن ناکام رہی وہ نیچے سے بھی ہل کر میرا لن اپنی  کنواری سکسی پھدی سے نکالنے کی کوشش کررہی تھی

 

لیکن اس کی تمام کوششیں رائیگاں گئیں اس کی آنکھوں سے آنسو نکل آئے اور آنکھیں جیسے ابھی پھٹ جائیں گی اس کا چہرہ سرخ ہوچکا تھا جس کو دیکھ کر اس کو ہونے والی تکلیف کا اندازہ کیاجاسکتا تھا وہ نیچے سے ہل کر میرا لن اپنی  سکسی پھدی سے نکالنے کی کوشش کی رہی تھی لیکن اس مقصد میں بھی ناکام رہی اب اس نے اپنی لمبی سکسی ٹانگیں اکڑا لی تھیں میں تھوڑی دیر کے لئے رکا اور اس کے ہونٹ چوسنے لگا

 

چند سیکنڈ کے بعد میں نے اس کے ہونٹوں سے اپنے ہونٹ ہٹائے تو بری طرح چلانےلگی فراز میں مرگئی  ہائے ماں خدا کے لیے لن کو باہر نکالو میری پھدی پھٹ گئی تھی اس میں گرم گرم لاہا جیسے کسی نے ڈال دیا ہو اس کو باہر نکالو مجھے اس جگہ پر بہت جلن ہورہی ہے (ساتھ میں اس نے اپنی پھدی کی طرف ہاتھ سے اشارہ بھی کیا) میں نے اس کو کہا کہ سارا اب جتنی تکلیف ہونا تھی ہوچکی اب مزید تکلیف نہیں ہوگی

 

مگر وہ کوئی بات بھی سننے کو تیار نہ تھی وہ سکسی بار بار  اس بات پر اصرار کرتی رہی کہ پہلے اس کو باہر نکالو پھر کوئی اور بات کرنا جب میں یہ سمجھ گیا کہ گھی سیدھی انگلیوں سے نہیں نکلے گا تو میں نے اس کو کہا کہ اچھا نکالتا ہوں تم اپنی ٹانگوں کی گرفت ڈھیلی کرو اس نے جیسے ہی اپنی ٹانگوں  کی گرفت ڈھیلی کی میں نے اپنی پوری قوت جمع کرکے ایک اور گھسا دے مارا اب میرا پورا لن جڑ تک اس کی سکسی پھدی  میں چلا گیا تھا

 

اس نے تکلیف کی وجہ سے ایک اور چیخ ماری جو میرے خیال کے مطابق ہمسائے کے گھر میں بھی سنائی دی گئی ہوگی میں نے فٹا فٹ اس کے منہ پر اپنا منہ رکھ دیا مگر اس نے اپنا منہ دوسری طرف کرلیا اور پھر سے چلانےلگی فراز اس کو باہر نکالو میں مرگئی وہ  سکسی لڑکی اپنے سر کو ادھر ادھر تکیے کے اوپر مار رہی تھی خیر میں چند لمحے کے لئے رکا تاکہ اس کی تکلیف میں تھوڑی سی کمی ہو اور پھر اس کے چلانے کے باوجود اپنا کام دوبارہ سے شروع کردیا

 

میں نے اس کی  سکسی پھدی کے اندراپنا لن آہستہ آہستہ سے موو کرنا شروع کیا اس کی سکسی پھدی  اب بھی اتنی ٹائٹ تھی کہ میرا لن جب اندرجاتا تو سارا کی پھدی کی دیوار کے ساتھ بری طرح رگڑ کھا رہا تھا چند منٹ تک ایسے ہی آہستہ آہستہ موو کرنے کے بعد سارا کی  سکسی پھدی تھوڑی سی نرم ہوگئی اور اور اس نے چلانابھی ختم دیا تھا اب اس کی آنکھیں بند تھیں اور اس نے اپنی زبان  اپنے دانتوں کے نیچے دبالی تھی

 

لیکن اس کی بند آنکھوں سے اب بھی آنسونکل رہے تھے اب شائد اس کی تکلیف تھوڑی کم ہوگئی تھی میں نے اپنے لن کی حرکت کو بالکل تھوڑا سا بڑھایا تو اس نے اپنے ہاتھ میری کمر کے گرد کس لئے اور منہ سے ہلکی آواز میں بولی فراز پلیز آہستہ ہ ہ ہ ہ ہ میں نے موونگ کم نہ کی بلکہ اس کو بڑھا دیا

تو اس سکسی نے اپنے ناخن میری کمر میں گارڈ دیئے خیر میں نے اپنا کام جاری رکھا اس کی سکسی چدائی ہوتی رہی  چند منٹ بعد اس کی ٹانگوں کی گرفت میری کمر کے گرد ٹائٹ ہونا شروع ہوگئی اور اس نے پھر سے اپنی زبان  دانتوں کے  نیچے دبا لی اب وہ  سکسی فارغ ہورہی تھی جیسے ہی وہ مکمل ہوئی اس کے منہ سے بس س س س س س س س کی آواز نکلی میں رکا نہیں بلکہ آہستہ آہستہ سے اپنے لن کی حرکت جاری رکھی

 

تقریباً دس منٹ تک یہ کام کرنے کے بعد وہ دوسری بار  وہ سکسی پھر فارغ ہوگئی مگر میرا لن ابھی تک اسی طرح اپنی منزل سے بہت دور سفر میں تھا اس نے مجھے کمر سے پکڑ کر اپنے اوپر لٹا لیا اور کہنے لگی فراز تھوڑی دیر صبر کرو میں اس کے اوپر لیٹا تو اس نے والہانہ انداز میں مجھے چومنا شروع کردیا میرے ہونٹوں گالوں کانوں آنکھوں گردن پر اس نے میری گردن پر اپنے دانتوں سے ہلکا سا کاٹ بھی دیا

 

جس کا نشان  کئی دن تک میری گردن پر بنا رہا چند منٹ تک سکسی مست کسنگ کے بعد وہ پھر سے تیار ہونے لگی میں نے پھر اٹھ کر اپنے لن کو حرکت دینا شروع کردی اور پانچ سات منٹ کے اندرمیں اس کے ساتھ ہی فارغ ہوگیا اب سارا کا سارا  سکسی جسم برف کی طرح ٹھنڈا ہوگیا تھا اور وہ لمبے لمبے سانس لے رہی تھی میں اب اس کے اوپر سے اتر کر اس کے ساتھ لیٹ گیا

 

اور اس کے سکسی جسم کے ساتھ کھیلنے لگا چند منٹ پہلے اس کے ٹائٹ  سکسی ممے اب کسی حد تک نرم پڑ گئے تھے اور اس کے نپلز جو پہلے باہر کو ابھرے ہوئے تھے اب بوبز کے اندرگھس گئے تھے اس نے اپنی آنکھیں بند کررکھی تھیں میں نے اس کو گالوں سے تھپتھپایا تو اس نے آنکھیں کھول دیں اور بولی فراز صاحب آپ نے یہ اچھا نہیں کیا میں نے کوئی جواب نہ دیا تو وہ پھر بولی مجھے معلوم ہوتا کہ آج یہ کام ہوجائے گاتو میں آپ کے ساتھ کبھی نہ آتی

 

اور یہ دیکھو آپ نے کتنی بے دردی کے ساتھ مجھے چودا ہے بیٹ شیٹ پہ خون ہی خون بکھرا پڑا ہے اگر مجھے یہ بھی معلوم ہوتا کہ یہ کام اتنا تکلیف کا باعث بنے گا تو میں یہاں سے نکل جاتی مگر یہ کام نہ کرتی اب میں نے اس کو مخاطب کیا اور کہا کہ ڈارلنگ پہلی بار ہر لڑکی کو کچھ تکلیف ہوتی ہے مگر اس کے بعد مزے ہی مزے ہوتے ہیں تو کہنے لگی فراز صاحب یہ تکلیف کچھ نہیں تھی میں تو مرنے والی ہوگئی تھی

 

ابھی تک مجھے اس جگہ پر درد ہورہی ہے دس پندرہ منٹ تک ایسے ہی لیٹے رہنے کے بعد میں اٹھ کر باتھ روم چلا گیا اور اپنے لن کو واش کرکے باہر آگیا پھر وہ باتھ روم جانےکے لئے بیڈ سے اٹھی  اور میں بھول گیا تھا کہ ایک بات اس سے چھپانی ہے لیکن وہ چھپ نہ سکی

تو اس کی نظر بیڈ شیٹ پر پڑ گئی  اسی جگہ پہ میں بیٹھا ہوا تھا تاکہ وہاں کا زیادہ خون ا سکو نظر نہ آئے لیکن مجھے یاد بھول گیا تھا اور ا س نے اب تک وہی چادر کا کونہ دیکھا تھا جہاں معمولی خو ن تھا  اب اتنے خون کو دیکھتے ہی وہ حیرت زدہ ہوگئی اور اس کے منہ سے ہائے ئے ئے ئے ئے ئے کا لفظ نکلا اور پھر کہنے لگی فراز صاحب کیا یہ میرا خون نکلا ہے میں نے مسکراتے ہوئے اس کوکہا کہ ہاں تو میرے گلے لگ گئی اور میری چھاتی پر محبت سے مکے مارتے ہوئے کہنے لگی فراز صاحب آپ بہت غلط آدمی ہو

 

خیر میں نے اس  سکسی کو باتھ روم کی طرف دھکیلا اور خود ڈرائینگ روم سے جاکر اپنے اور اس کے کپڑے اٹھا لایا وہ باتھ روم سے نکلی اور ہم دونوں نے کپڑے پہنے اس کے بعد میں نے اس کو کہا کہ اب چلو بہت بھوک لگ رہی ہے ہم لوگ فورٹریس میں بندو خان  پر چلے گئے جہاں سے کھاناکھا کر میں نے اس کو اس کے گھر ڈراپ کردیا گاڑی سے اترتے ہوئے  سکسی سارا مجھ سے کہنے لگی فراز صاحب اب آپ مجھے چھوڑ نہ جائیے گا

 

میں اس کی بات سن کر مسکرا دیا اور گاڑی لے کر گھر کی طرف آگیا اگلے روز اس کے بھائی کامران کا فون آگیا اور اس نے مجھ سے پوچھا کہ کل سارا آپ کے ساتھ تھی تو میں نے اس کو بتا دیا کہ ہاں تو ہنستے ہوئے کہنے لگا پھر تو کام ہوگیا ہوگا میں نے اس سے بات چھپا لی اور بتایا کہ نہیں کل صرف لانگ  ڈرائیو پر گئے تھے اگلی بار شائد وہ کام بھی ہوجائے تو مجھے کہنے لگا کہ فراز صاحب میں نے تو آپ کو استاد سمجھ کر آپ سے مدد چاہی تھی مگر آپ تو مجھ سے بھی ڈھیلے ہو



اس سے تو بہتر تھاکہ میں خود ہی ہمت کرلیتا جس پر میں نے اس کو کہہ دیا کامران صاحب میں آپ کی کوئی مدد نہیں کرسکتا تو کہنے لگا فراز صاحب مجھے معلوم ہے آپ یہ سب کیوں کہہ رہے ہو لیکن آپ جو سوچ رہے ہو ویسا ہوگا نہیں اور فون بند کردیا ایک دو بار کامران نے مجھے پھر فون کیا اورکہا کہ تم اس کے ساتھ سیکس کی ویڈیو بنا لو اور مجھے دکھا دو باقی کام میں خود کرلوں گا لیکن میں نے اس سے بھی انکارکردیا مجھے اس بات پر افسوس ہے کہ میں نے کامران کے ساتھ وعدہ خلافی کی لیکن اگر میں اس کے ساتھ کیا ہوا وعدہ پورا کرتا تو یہ اس سے بھی بری بات ہوتی
سکسی سارا کے ساتھ اس دن کے بعد ہر روز فون پر بات ہوتی ہے اور اب بھی میں اس سے بات کئے بغیر سوتا نہیں ہوں اس نے کئی بار مجھ سے ملنے کے لئے کہا لیکن میں نے انکارکردیا ایک دو بار اس  سکسی نے ضد کرکے ملاقات تو کرلی لیکن یہ ملاقات صرف آ
ٹ ڈور ہی رہی اس کے بعد میں کبھی بھی اس کو اپنے گھر نہیں لے کر گیا  سکسی سارا نے اپنی کئی سہیلیوں سے میرا تذکرہ کیا اور وہ بھی میرے ساتھ ملنے کے لئے بے چین ہیں (سیکس کے لئے نہیں بلکہ اپنی سہیلی کی پسند کو دیکھنے کے لئے) مگر میں اب اس سے کترا جاتا ہوں
قارئین دوستو میں یہاں یہ بات کرنا بھی ضروری سمجھتا ہوں کہ  سکسی سارا وہ لڑکی ہے جس کے ساتھ میں نے شادی کے لئے بھی سوچا لیکن پھر میں نے یہ بات اپنے ذہن سے نکال دی کیونکہ میری اور اس کی دوستی کی بنیاد بہت غلط طریقے سے رکھی گئی اس کے علاوہ میری اور سکسی  سارا کے گھر والوں کی مالی پوزیشن میں بہت زیادہ فرق ہے میں ایک متوسط طبقے سے تعلق رکھتا ہوں جبکہ اس کا باپ صنعت کارہے

میں نہیں سمجھتا کہ اگر سکسی  سارا راضی ہوبھی جائے تو اس کے والدین میری اور اس کی شادی پر رضا مند ہوں گے اگر سارا کو کہوں تو وہ گھر والوں کی مرضی کے خلاف بھی مجھ سے شادی کرنے کو تیار ہوجائے لیکن میں اس طرح کرنے کو اچھا نہیں سمجھتا اس کے علاوہ شادی کی صورت میں میں اس کو افورڈ بھی نہیں کرسکوں گا اب بھی کبھی کبھی میں یہ سوچتا ہوں کہ سارا بہت اچھی لڑکی ہے کتنی ماڈرن سکسی بڑے بڑے بوبز ہیں اس کے  مجھے اس کے ساتھ شادی کرلینی چاہئے لیکن میں کوئی حتمی فیصلہ نہیں کرپارہا ہوں اگر آپ دوستوں میں سے کیوئی چاہے تو مجھے مشورہ دے سکتا ہے کہ میں کیا کروں مجھے انتظار رہے گا

 

Share this post


Link to post
Share on other sites

گو کہ مشورہ ہم سے مانگا تو نہیں ہے لیکن پھر بھی ہم ایک مشورہ دے دیتے ہیں وہ بھی ایک دم فری آف کاسٹ


Please login or register to see this image.

/emoticons/default_emo_hot.gif" alt=":h" /> سب سے پہلے تو تم لکھنا سیکھو۔۔


Please login or register to see this image.

/emoticons/default_emo_hot.gif" alt=":h" /> اُس کے بعد تدوین سیکھو


Please login or register to see this image.

/emoticons/default_emo_hot.gif" alt=":h" /> پھر آرائش سیکھو


Please login or register to see this image.

/emoticons/default_emo_hot.gif" alt=":h" /> اور اُس کے بعد ترجمہ نگاری سیکھو۔


 


یہ چاروں ہنر مل گئے تو پھر تم لکھاری بن سکو گے۔


 


مانا کہ یہ تم نے انگلش سے اردو ترجمہ کر کے اپنے تئیں ایک اچھوتی کاوش فورم کی نذر کی ہے


 


یہاں لوگ تم کو سراہیں گے بھی اور بلا وجہ کی تعریف بھی کریں گے۔


 


لیکن یہ راجہ۔۔ تمہیں تمہاری خامیاں بتا کر تم کو دل شکستہ کرنا نہیں چاہتا۔۔ اس راجہ کا مقصد صرف یہ ہے کہ تمہارے اندر چھُپا ہوا وہ لکھاری باہر نکال سکے جو اب تک تمہاری ذات کے کسی گوشے میں پنہاں ہے۔


اگر میری اردو تمہاری سمجھ سے بالاتر ہے تو ڈکشنری لے کر بیٹھ جاؤ پھر آرام سے سمجھ آجائے گی وگر نہ فورم پر دیگر ممبران جو کہ سینیئر اور کافی اچھی پوسٹوں پر ہیں اُن سے رابطہ کر کے میرے بارے میں اور میرے کمنٹس کے بارے میں پوچھ سکتے ہو۔


 


تمہاری اس کہانی میں "جس چیز کی کمی" شدت سے "محسوس" ہوئی    وہ ہے سیکس کی اور سیکسی کی


 


Please login or register to see this image.

/emoticons/default_emo_redface.png" alt=":">" /> لفظ سیکس اور سیکسی کو تم نے بالکل بھی نہ ہونے کے برابر استعمال کیا ہے جو کہ سراسر نا انصافی ہے


 


Please login or register to see this image.

/emoticons/default_emo_rolleyes.png" alt="8-|" /> امید ہے کہ اتنی تمہید کے بعد اصل بات تمہاری سمجھ میں آگئی ہوگی


 


اور ہاں آئندہ فورم پر کہانی پیش کرتے وقت اس بات کا خاص خیال رکھنا کہ خونی رشتوں کی پامالی کی اجازت یہ فورم کبھی نہیں دیتا۔۔ تمہاری کہانی میں بھی اشارتاً ایسا کچھ کچھ شائبہ ملتا ہے لیکن چونکہ تم نے سیکسی سارہ کے ساتھ اُس کے بھائی کا کوئی معاشقہ شامل نہیں کیا اس لیے تم کو معاف کرتے ہوئے تمہاری کہانی کو فورم کی زینت بنے رہنے دیتا ہوں باقی آگے ایڈمن کی مرضی ہے چاہیں تو وہ تمہاری اس کاوش کو کچرے کے ڈبہ کی نذر کردیں۔


 


Please login or register to see this image.

/emoticons/default_emo_rolleyes.png" alt="8-|" /> کوئی بات بُری لگی ہو تو۔۔۔۔۔


Please login or register to see this image.

/emoticons/default_emo_playfull.gif" alt="<:-P" /> ایک بار پوچھ ضرور لینا اپنا دل صاف کرنے کے لیے


 


Please login or register to see this image.

/emoticons/default_emo_mstickle.gif" alt=":gstickle:" /> پھر چاہے بھلے ہی دو نہیں چار روٹیاں زیادہ کھاؤ لیکن اپنے خرچہ پر


 


فقط خیر اندیش


راجہ شاہی


Share this post


Link to post
Share on other sites

ایک تو آپ لوگ چیٹ کرو کرو۔تا کہ ایک دوسرے سے ملا جا سکے۔میں لکھنا چاہتا ہو مگر کیسے بتا سکتے ہیں

Share this post


Link to post
Share on other sites

Create an account or sign in to comment

You need to be a member in order to leave a comment

Create an account

Sign up for a new account in our community. It's easy!

Register a new account

Sign in

Already have an account? Sign in here.

Sign In Now

Sign in to follow this