Sign in to follow this  
khoobsooratdil

سیکس کے بھرپور مزے کے لئے مشورے

Recommended Posts

شرم گاہ سے پانی کے کم اخراج

پر خواتین کے لئے مشورے

طبی ماہرین کے مطابق خواتین سیکس سے اتنا ہی زیادہ مزہ لیتی ہیں جتنا کہ وہ سیکس کے دوران ویٹ ہوتی ہیں( ان کی شرم گاہ سے پانی نکلتا ہے)ُبہت زیادہ پانی نکلنا اور سیکس کے دوران شرم گاہ کا خشک رہنا نہ صرف خواتین کو سیکس کے مزے سے دور رکھتا ہے بلکہ ان کی صحت کے لئے بھی نقصان دہ ہے ماہرین کے مطابق ایسی خواتین کی تعداد زیادہ ہے جن کی شرم گاہ سے سیکس کے دوران پانی کم نکلتا ہے اس کی وجوہات مختلف ہوسکتی ہیں خواتین کی شرم گاہ سے سیکس کے دوران پانی کے فلو کو درست رکھنے کے لئے ادویات بھی مارکیٹ میں دستیاب ہیں لیکن ان کے سائیڈ افیکٹ زیادہ ہیں جس کی وجہ سے ان کے استعمال سے گریز کرنا چاہئے ماہرین کے مطابق کم فلو کی شکایت عمر کے تقاضوں یا ہارمونز کی کمی یا زیادتی کی وجہ سے ہوسکتی ہےتاہم خواتین کی اکثریت دیسی ٹوٹکوں سے اپنا فلو درست کرسکتی ہیںجو کہ درج ذیل ہیں

-1 ایسی خواتین جو کہ کسی قسم کا نشہ کرتی ہیں یا وہ بہت زیادہ پوٹینسی والی ادویات استعمال کرتی ہیں ان کو اس کی وجہ سے فلو میں کمی کامسئلہ ہوسکتا ہے وہ نشہ آور اشیاءاور ادویات کا استعمال کم کردیں تو فلو ٹھیک ہوسکتا ہے

-2 ہو سکتا ہے کہ سیکس کے د وران کی فعل کی کمی کی وجہ سے یہ فلو کم ہوگیا ہو ایسی صورت میں سیکس کے دوران نت نئے تجربوں سے بھی آفاقہ ہوسکتا ہے کسنگ اور ساتھی کے جسم کے ساتھ چھیڑ چھاڑ کرنے سے بھی یہ مسئلہ حل ہوسکتا ہے خواتین کو چاہئے کہ وہ سیکس کے دوران پوزیشنز کو تبدیل کرتی رہیں جس طرح آپ سیکس کرنے کے بارے میں سوچ سکتی ہیں اس کو کرنے کی کوشش کریں ایسی صورت میں اورل سیکس بھی مفید ثابت ہوسکتا ہے سیکس کے دوران دونوں فریق ایک دوسرے کے پورے جسموں کو چومیں اور خصوصاً ان اہم مقامات پر زیادہ دیر تک کسنگ کی جائے جو سیکس کے معاملے میں زیادہ حساس ہیں

-3 خواتین کوشش کریں کہ اپنے ساتھی کو اس بات کا عادی بنائیں کہ وہ روائتی سیکس سے پہلے اورل سیکس ضرور کرے اس کام میں یہ خیال رہے کہ خواتین کی مذکورہ جگہ خاص طورپر دانے اور اس جگہ کے ہونٹوں پر ان کے ساتھی کی زبان زیادہ دیر تک کام کرے اور اس کو بار بار زبان کی نوک سے چھوا جائے جبکہ اسی فعل کے دوران مرد ساتھی اپنی خاتون ساتھی کے بیک ہول (پیچھے والے سوراخ ) اور آگے والے سوراخ کے درمیان والی جگہ کو مسلتا بھی رہے لیکن یہ مسلنا زیادہ زور سے نہیں ہونا چاہئے جبکہ اس دوران مرد ساتھی اپنی خاتون ساتھی کے پچھلے سوراخ میں اپنی انگلی کبھی اندر ڈالتا اور باہر نکالتا رہے تو بھی آفاقہ ہوسکتا ہے اس طریقہ کار سے 65 فی صد خواتین کو آفاقہ ہوسکتاہے

-4 طبی ماہرین کے مطابق معمول کے مطابق سیکس کرنے سے بھی خواتین کا فلو ٹھیک رہتا ہے اس میں زیادہ وقفہ ڈالنے سے فلو میں کمی یا زیادتی ہوسکتی ہے طبی ماہرین کے مطابق کسی بھی نارمل خاتون کے لئے ہفتہ میں کم از کم 2 بار سیکس کرنا اس کی صحت کے لئے ضروری ہے

-5 صحت مند جسم کے مالک مرد اور خواتین ہی سیکس کو بہتر طریقے سے انجوائے کرسکتے ہیں خواتین کو چاہئے کہ وہ اپنی خوراک میں پھلوں سبزیوں اور دودھ کا استعمال بڑھائیں پانی کا زیادہ سے زیادہ استعمال کریں زیادہ چکنائی والی اشیاءمثلاً گائے کے گوشت سے پرہیز کریں اس کی جگہ وائٹ میٹ (مچھلی مرغی وغیرہ) کا استعمال کریں

-6 ماہرین نے کم فلو والی خواتین کو یہ بھی مشورہ دیا ہے کہ وہ روائتی سیکس سے پہلے اپنی جائے مخصوصہ کو پانی کے ساتھ دھو لیں تو اس سے بھی وقتی افاقہ ہوسکتا ہے تاہم ماہرین نے اس بارے میں کہا ہے کہ خواتین فلیور والی چکناہٹ جائے مخصوصہ پر لگانے سے پرہیز کریں اس سے سائیڈ افیکٹ ہوسکتے ہیں

ماہرین نے خبردار کیا ہے کہ اگر کسی خاتون کا فلو معمول سے کم ہوتو اس کو مقام مخصوصہ پر انفیکشن ہوسکتی ہے خواتین کی مخصوص جگہ پر اندرونی اور بیرونی ہونٹ فلو کے کم ہونے سے انفیکشن سے سوج سکتے ہیں اور خواتین کی بچہ پیدا کرنے کی صلاحیت بھی مثاثر ہوسکتی ہے ماہرین کے مطابق خواتین اپنے فلو کو درست رکھنے کے لئے اپنے ساتھی کو اعتماد میں لیں اور کوشش کریں کہ اوپر دیئے گئے نقطہ نمبر 2 اور 3 پر خصوصی توجہ دیں بلکہ یہ دونوں نقاط ایسے ہیں جن پر ایسی خواتین کو بھی توجہ دینی چاہئے جن کو فلو میں کوئی مسئلہ نہیں ہے ماہرین کے مطابق مردوں کو بھی چاہئے کہ وہ اپنی ساتھی خواتین کا اس معاملے میں ساتھ دیںماہرین کے مطابق ان دونوں نقاط پر عمل درآمد کی صورت میں سیکس کے دوران مرد اور عورت کی فراغت کے درمیان وقت کا فرق بھی کم ہوجاتا ہے اکثر سنا جاتا ہے کہ خواتین مردوں کی نسبت مطمیئن ہونے میں زیادہ وقت لیتی ہیں اس کی وجہ بھی ان نقاط پر توجہ نہ دینا ہوتا ہے ماہرین نے مزید کہا ہے کہ سیکس کے مزے لوٹنے کے لئے تمام خواتین کو چاہئے کہ وہ نت نئے طریقوں پر عمل درآمد کریں ان کے اس اقدام سے ان کے ساتھی مرد بھی زیادہ انجوائے کرسکیں گے

Share this post


Link to post
Share on other sites

عمر بھائی آپ کو مزاق میں ڈاکٹر کہا تھا آپ تو پکے پکے ڈاکٹر بن گئے ہو۔ واہ بہت ہی عمدہ پوسٹ ہے، کڑیو کج عقل کرو

Share this post


Link to post
Share on other sites
Guest
This topic is now closed to further replies.
Sign in to follow this