Jump to content
URDU FUN CLUB

Mani09

VIP MASTER PRO
  • Content Count

    59
  • Donations

    $0.00 
  • Joined

  • Last visited

Community Reputation

91

Profile Information

  • Gender
    Male
  • Location

Recent Profile Visitors

The recent visitors block is disabled and is not being shown to other users.

  1. بھائی مجھے تو لگتا ہے آپ الٹ لکھ گئے ہیں۔ شیخو کی کہانی بالکل غیر منطقی تھی جس کا خلاصہ یہ تھا کہ پورے گاؤں میں ایک یاسر ہی مرد تھا جو گاؤں کی ہر عورت کو چود رہا تھا اور اس کی مردانگی کا یہ عالم تھا کہ جوان بچوں کی مائیں بھی درد سے ہائے ہائے کر اٹھتی تھیں۔ ڈاکٹر صاحب نے اس کہانی کو ایک فطری اور منطقی سمت میں ڈالا ہے اور بہترین انداز میں آگے بڑھا رہے ہیں۔ ڈاکٹر صاحب ایک اعلی پایہ کے لکھاری ہیں اور ان کا شیخو کے ساتھ موازنہ انتہائی احمقانہ ہے۔ باقی رہی بات یہ کہ یہ شیخو کی سچی کہانی تو یہ بات ہضم نہیں ہوتی بھائی کہ اتنی غیر منطقی کہانی بھی حقیقی بھی ہو سکتی ہے۔ اگر یہ سچ بھی ہوا تو کہانی اب بدل گئی ہے اور اب اس کا شیخو کی کہانی سے سے دور دور تک کوئی تعلق نہیں
  2. ڈاکٹر صاحب ایک خود ساختہ منگیتر آئی تھی جمیل کی لیکن پھر رو پوش ہو گئی۔ اس کو ہم فوت ہی سمجھیں یا لوٹ کے آئے گی؟
  3. ڈاکٹر صاحب تسی گریٹ او۔ ساری قیاس آرائیوں کو چود کے رکھ دیا۔ اب سوال یہ ہے کہ پلان تھا کس کا اور تھا کیا؟ کون ہے جو صدف کے ذریعے یاسر کو پھنسانے کی کوشش کر رہا ہے اور اس کا پورا پلان کیا ہے؟ ممکن ہے کہ وہ صدف اور یاسر کے تعلق کے بارے میں جانتا ہو
  4. میرے خیال میں شادا اور اس کے ساتھی تھے جنہوں نے نازی کے ساتھ اجتماعی زیادتی کی
  5. ڈاکٹر صاحب بچے کی جان لو گے کیا؟ اور کتنا سسپنس ڈالو گے بھائی؟ اب یہ فیضان کہاں سے آگیا؟ ہو نہ ہو اس کا ماہی کے ساتھ کوئی تعلق نکل آئے گا
  6. اس کا تو کوئی جواز نہیں بنتا۔ جنید اور ضوفی والی بات میں نے اس لیے کی کیونکہ ماہی والی رات وہ دونوں دوکان میں اکیلے تھے
  7. کبھی کسی نے ضوفی اور جنید کے بارے میں نہیں سوچا
  8. بندۂ نا چیز کا ایک قیاس اور بھی ہے اور وہ یہ کہ یاسر ضوفی کے توسط سے بدلہ چکائے یا ہو سکتا ہے چکا چکا ہو
  9. اور شاید یہی یاسر کی زندگی کا ٹرننگ پوائنٹ ہو گا۔ اس کی ہوس احساس ندامت میں بدلے گی اور پھر وہ اپنے بچھائے ہوئے کانٹے چنے گا
  10. ڈاکٹر صاحب آپ کی باتوں سے ناخوشگوار حقیقت کے عیاں ہونے کا گماں ہو رہا ہے۔ مجھے لگتا ہے جس کام سے یاسر نازی کو بچانا چاہ رہا ہے وہ نازی بصد مرضی و مسرت کر چکی ہے۔ مرد شادے کے علاوہ بھی کوئی ہو سکتا ہے
  11. سدو کے ہونٹوں اور گانڈ سے وڈیروں کے خلاف بغاوت شروع ہوا چاہتی ہے 😂😂😂😜
  12. I STRONGLY AGREE WITH YOUR OPINION. WRITER ALWAYS HAS A PLOT IN HIS MIND ON WHICH HE WRITES HIS STORY. WE CAN ONLY LIKE OR DISLIKE IT. IF WRITER STARTS PAYING HEED TO EVERYONE'S WORDS THAN HE WON'T BE ABLE TO COMPLETE HIS STORY EVER
  13. یار میں نے تو سمجھا تھا یہ رولا مک گیا ہے لیکن یہ اس نے پھر سر اٹھا لیا ہے۔ ڈاکٹر صاحب آپ فضول لوگوں کی بکواس کو نظر انداز کریں اور اپنے قدردانوں کی خاطر اس کہانی کو اپنے مخصوص اور اچھوتے انداز میں جاری رکھیں۔
  14. ڈاکٹر صاحب جتنا سسپنس آپ کی کہانی میں ہوتا ہے، پڑھنے والا ہر قسط کے بعد نیا قیاس کرتا ہے۔ اب مجھے لگتا ہے کھپرو کی رانی اور کوئی نہیں بلکہ خود شکو ہو گی
×
×
  • Create New...