Jump to content
URDU FUN CLUB

Asifa Kamran

Members
  • Content Count

    532
  • Joined

  • Last visited

Everything posted by Asifa Kamran

  1. واسکوڈی گاما: چھٹیوں کیلیے معروف بھارتی ریاست گوا میں ایک اسکول کے بیت الخلا میں7 سالہ بچی سے زیادتی کی گئی ہے جس پرعوامی مظاہرے شروع ہو پڑے اوراسکول کی ہیڈمسٹریس کو گرفتار کرلیا گیا ہے۔ یہ بات پولیس نے منگل کوکہی۔ یہ واقعہ جو پیر کو واسکو ڈی گاما شہرمیں پیش آیااس کے ملزم کی گرفتاری کے لیے بڑے پیمانے پرکارروائی شروع کردی گئی ہے ۔اس بچی کو تفریح کے دوران اسکول کے بیت الخلا کے اندر زیادتی کا نشانہ بنایا گیا۔ ہزاروں افراد نے گزشتہ رات اسکول کا گھیرائو کرلیا اورہیڈمسٹریس اورملزم کی گرفتاری کا مطالبہ کیا۔گوا میں پیرکو دوسرے واقعے میں ایک پولیس اہلکارکوطوائف سے زیادتی کے الزام میں گرفتار کیا گیا ہے۔
  2. دوسروں کی بہن ، بیٹیوں ، ہونے والی بیوی کو دوستی کی آفر کرنا ٹھیک لیکن اپنی بہن ، بیٹی کو کوئی آفر کرے تو عزت کا معاملہ کیوں بھئی؟ دوسروں کی بہن ، بیٹیوں ، هونے والی بیوی سے محبت کے دعوے دکھاوے اپنی بہن بیٹی سے کوئی دعوا کرے تو تکلیف کیوں بھئی؟ دوسروں کی بہن ، بیٹیوں هونے والی بیوی کی دفعہ آنکھیں سینکنا اپنی بہن بیٹی کی دفعہ تکیف کیوں بھئی؟ خود کی بہن ، بیٹی هونے والی بیوی کسی سے پاکیزه محبت و دوستی کا دعوی کرے تو بے غیرت بے حیاء دوسروں کی بہن ، بیٹی هونے والی بیوی کو محبت کے سبق پڑھانا دوستی کی طرف راغب کرنا جائز و حیاء و غیرت کا اعلی مقام کیوں بھئی؟ دوسروں کی بہن بیٹیوں کو ویلنٹائن کے موقع پر اپنے لیے سجنے سرخ جوڑے کی فرمائشیں گلابوں کی خواہشات ٹھیک و جائز اپنی بہن ، بیٹی کسی کے لیے سجے سنورے گلاب دے، تحائف کا تبادلہ کرے تو غلط و ناجائز کیوں بھئی؟ آخر ایسا کیوں نہیں کی جو ہم اپنی بہن بیٹی ہونے والی بیوی کے لیے پسند کرتے دوسروں کے لیے نہیں یہ ڈبل اسٹینڈرڈ کیوں؟ سوشل نیٹ ورک پر موجود هرلڑکی کو دوستی اور ٹائم پاس کی خواہش مند ہے کیوں سمجھا جاتا ھے؟
  3. ji karta he k khara kar k ap k hath m pakra don or ap zor zor... sey hilaooo or bolo... . . . . . . . . . "" IS PARCHAM K SAYE TALE HAM IK HEIN HAM IK HEIN""
  4. 3rd class ka baccha apni Miss se kehta hai Mai apko kesa lagta hun….?? . Miss: so sweet . Baccha: To phir mai apne ammi abbu ko aap ke ghar kab bheju……?? . Miss: wo q ?? . Bacha: q ki wo hamari baat aage chalaye… . Miss: ye kya bakwas hai.. . Baccha . . . . . . . . . Tution padhane ke liye…, miss aap bhi na Qasam se TV dekh dekh k kharab ho gai hain…
  5. ‘GIRL:Janu mere muh me dalo mei chusongi BOY:Nhi agr tm chak mara to me kya kruga? GIRL:Tm Dosri kulfi Le Lena Maza Awami Kha Badami. Tari gaandi scoh hai Harami’
  6. ‘Bachi To Nahi Thi Bhar Poor Jawan Thi Wo. Jb Daalney Laga Me To Thori Pareshan Thi Wo Huwa Dard Usay Itna k Seh Na Saki Wo Khoon Nikalta Dekh kr Roney Lagi wo Taaklef Itni Hoi Chilla k Boli Bahir Nikalo Please Baray Size ki Chooriyan Mere Hathon Me Dalo. (OYE HELLO! MAI GANDAY SMS NHI KRTA)’
  7. Larki jub saray kapray utaar laiti hay to kia hota hay? ? ? ? ? ? ? ? ? ? ? ? ? ? ? Taar khali ho jati hay. Yaar kabhi to +ve socha karo…
  8. ye ladkiya bhi badi ageeb hoti hai bat bat par tufan utha leti hai, kuch na ka karo to muh fula leti hai. kuch kar do to pet fula leti hai.
  9. She is Hot! She Is Sweet! She Always Need a Lip 4 Kiss Whole WORLD MAD 4 HER! Who Is She? Do You know? "Tea" chai piyo, mast jiyo............................
  10. Dhoni says Only Shoaib Malik knows how to play on Indian pitches :-) . . . . . . . . . . Samajh Tou Gaye Houn Gaye.
  11. بھارتی ریاست مدھیہ پردیش میں پولیس کا کہنا ہے کہ سوئٹزر لینڈ سے تعلق رکھنے والی ایک خاتون سیاح کے ساتھ اجتماعی جنسی زيادتی کی گئی ہے۔ یہ واقعہ ضلع دتیہ میں ہوا ہے جہاں پولیس نے گینگ ریپ کے الزام میں آٹھ افراد کو حراست میں لیا ہے۔ ضلع دتیہ کے ایس پی سی ایس سولنکی نے خبر رساں ادارہ پی ٹی آئی کو بتایا ہے کہ یہ واقعہ جمعہ کو رات گئے پیش آیا۔ سولنکی کا کہنا تھا کہ متاثرہ خاتون اپنے شوہر کے ساتھ تھیں جو بھارت سیاحت کی غرض سے سائیکل پر سوار ہو کر ملک کا دورہ کر رہے تھے اور رات کو جب یہ واقعہ پیش آيا تو وہ ایک گاؤں کی سیر کر رہے تھے۔ پولیس کا کہنا ہے کہ دونوں میاں بیوی اوچھا کے مندروں سے واپس ہوکر آگرہ کی طرف رواں تھے جنہیں راستے میں پہلے لوٹا گیا پھر خاتون کے ساتھ ان کے شوہر کی موجودگی میں اجتماعی جنسی زیادتی کی گئی۔ پولیس کے مطابق متاثرہ خاتون کو گوالیار کے ایک ہسپتال میں بھرتی کیا گيا اور ڈاکٹروں کی رپورٹ کے مطابق خاتون جنسی تشدد کا نشانہ بنایا گيا۔ پولیس نے اس سلسلے میں شک کی بنیاد پر آٹھ افراد کو گرفتار کیا ہے لیکن اس بات کی تصدیق نہیں ہوسکی کہ اصل مجرم پکڑے گئے یا نہیں۔ پولیس کا کہنا ہے کہ جو افراد حراست میں لیے گئے ہیں ان سے پوچھ گچھ جاری ہے اور اس میں ملوث مزید افراد کی تلاش جاری ہے۔ پولیس کا کہنا ہے کہ ایسا لگتا ہے کہ حملہ آور بد معاش ہیں جنہوں نے انہیں مارا پیٹا اور ان کا لیپ ٹاپ سمیت سامان بھی لوٹ لیا۔ چند ماہ قبل ہی دلی میں ایک طالبہ کے ساتھ اجتماعی جنسی زیادتی کا واقعہ پیش آيا تھا جس کے خلاف زبردست احتجاجی مظاہرے ہوئے تھے۔ اس واقعے کے بعد سے ہی ملک میں خواتین کے تحفظ سے متعلق طرح طرح کے سوالات اٹھتے رہے ہیں اور دباؤ کے بعد حکومت نےنئے قوانین وضع کرنے کا عمل شروع کیا ہے۔
×