faizanoor

VIP SILVER PRO
  • Content count

    278
  • Joined

  • Last visited

  • Days Won

    20

faizanoor last won the day on May 26 2017

faizanoor had the most liked content!

Community Reputation

665

Profile Information

  • Gender
    Female
  • Location
  1. ایک ترسی ہوئی عورت اپنے پڑوسی کے ساتھ سیکس کر رہی تھی کہ اچانک شوہر آگیا. منظر دیکھکر شوہر نے پڑوسی کو مارنا شروع کردیا. بیوی بولی مارو اور مارو اسے. پرائی عورت پہ ہاتھ ڈالتا ہے. اسی اثنا میں پڑوسی نے شوہر کو قابو کرکے اسے مارنا شروع کردیا. بیوی پھر بولی. مارو اور مارواسے .نہ خود کرتا ہے نہ دوسروں کو کرنے دیتا ہے.
  2. عنوان سے لگ رہا ہے کہ کہانی طوالت اختیار کریگی۔ کہانی میں کاشف لاشاری کا کردار متضاد رویوں کا حامل محسوس ہورہا مثلاً ایک جگہ وہ اپنی ہی محلہ کی ایک لڑکی کو اسکے گھر کے دروازے پر دبوچ لیتا ہے۔ دوسری جگہ وہ اپنی بھابھی کی سہیلی کو بھابھی کے گھر میں ہی تنہائی میں ملنےپر مجبور کردیتا۔ اور جب ایک لڑکی ہوٹل میں اس سے ملتی ہے تو وہ کسی کنواری لڑکی کی طرح ری ایکٹ کرتاہے۔ ممکن ہے کہ طبقاتی فرق اس کی ایک وجہ ہو۔اوور آل امید ہے کہ کہانی قابل ذکر عرصے تک قارئین کو انٹرٹین کریگی۔
  3. شباب حیات

    ہاہاہاہا
  4. الٹی شلوار

    جی یہ فرحانہ صادق کا ہی ہے.
  5. الٹی شلوار

    یقین سے نہیں کہا جاسکتا مگر انداز تحریر منٹو ہی کا ہے.
  6. الٹی شلوار

    الٹی شلوار صاحب اب میرا کام ہو جائیگا نا؟اس نے دیوار کی طرف رخ موڑا اور تیزی سے کپڑے پہننے لگی۔ہاں ہاں بھئی ہو جائیگا۔میری سانسیں ابھی بھی بے ترتیب تھیں۔ پھر میں پیسے لینے کب آوں؟ڈوپٹے سے اس نے منہ پونچھا اور پھرجھٹک کر لپیٹ لیا۔پیسے ملنے تک تو تمہیں ایک دو چکر اور لگانے پڑیں گے۔ کل ہی میں مالکان سےتمہارے شوہر کا ذکر کرتا ہوں۔میں نے شرٹ کے بٹن لگائے۔ہاتھوں سے بال سنوارے اور دفتر کے پیچھے ریٹائرنگ روم سےباہراحتیاط کے طور پہ ایک طائرانہ نظر دورانے لگا۔ویسے تو دفتر کا چوکیدار مجھ سے چائے پانی کے پیسے لیکر میرا وفادار ہی تھا مگر میں کوئی مشکل میں پڑنا نہیں چاہتا تھا۔پھر میں کل ہی آجاوُں؟وہ میرے پختہ جواب کی منتظر تھی۔نہیں کل نہیں!!!میں روز روز یہاں آنے کا رسک نہیں لے سکتا تھا۔اس لئے بس آہ بھر کے رہ گیا۔ ہائے غریبوں کو بھی کیسے کیسے لعل مل جاتے ہیں۔میں نظروں سے اس کے جسم کے نشیب و فراز کو تولتے ہوئے سوچنے لگا۔ارے سنو!! تم نے شلوار الٹی پہنی ہے۔وہ چونک کر اپنی ٹانگوں کی طرف جھکی اور خجل ہو گئی۔اسے اتار کر سیدھی پہن لو۔میں چلتا ہوں میرے پانچ منٹ بعد تم بھی پچھلے دروازے سےنکل جانا۔اور ہاں احتیاط سے جانا۔ کہیں تمہیں کوئی دیکھ نا لے۔زیمل خان چار سال سے ہماری فیکٹری میں رات کا چوکیدارتھادو مہینے پہلے ڈاکووُں سے مزاحمت کے دوران ٹانگ پہ گولی لگی اور اب بستر پہ لاچار پڑا تھا۔فیکٹری کے مالکان اس کی امداد کے لئے پچاس ہزار روپے دینے کا اعلان کر کے بھول چکے تھے۔اس کی بیوی اس سلسلے میں بار بار چکر لگارہی تھی۔میں نے اس کی مدد کرنے کا فیصلہ کیا اور شام کو اسے چھٹی کے بعد فیکٹری آنے کا اشارہ دیا۔ عمر!عمر!اپارٹمنٹ کی سیڑھیاں چڑھتے ہوئے عقب سے مجھے اپنی بیوی کی آواز سنائی دی۔اسکے اور میرے گھر آنے کا وقت ایک ہی تھا۔وہ ایک چھوٹے بنک مین کلرک تھی۔ایک خوشخبری ہے عمر!وہ تیزی سے اوپر آرہی تھی۔خوشی سے اس کی باچھیں کھل رہی تھیں۔مینجر صاھب میرے کام سے بہت خوش ہیںاور آج ہی انھوں نے میرے پروموشن کی بات کی ہے۔دروازے کے سامنے اس نے ہینڈ بیگ ٹٹولااور چابی نکالی۔انہوں نے کہا تھوڑا وقت لگے گا مگر کام ہوجائےگا۔ ارے واہ مبارک ہو۔میں نے خوشدلی سے اسے مبارکباد دی۔ تمہیں پتہ ہے پانچ امیدوار ہیں مگرمینیجر صاحب میرے کام سے بہت خوش ہیںاور کیوں نہ ہوںمیں محنت جو اتنی کرتی ہوں۔وہ اندر داخل ہوتے ہوئے بھی مسلسل بولے جارہی تھی۔ میں اسکی پیروی کرتے ہوئےاس کی فتح کی داستان سے محفوظ ہورہا تھا کہ ۔ اچانک میری نظر اسکی الٹی شلوار کے ریشمی دھاگوں سے الجھ گئی۔
  7. بدلہ از سٹوری میکر

    کہانی جتنی بہترین تھی اختتام اتنا ہی مایوس کن تھا۔بہتر ہوتا اگر کہانی آخر میں بغیر کسی حادثے کے اپنے منطقی انجام کو پہنچتی۔ آپ نے نانی کی انٹری کراکر کہانی کا حسن گہنا دیا۔اوور آل لاجواب کہانی تھی۔احسن اور عریشہ جیسے کردار ہمارے ہی معاشرے کا ناقابل تردید حصہ ہیں۔ امید کرتی ہوں کہ آپ کی تحاریر کا سلسلہ اب جاری رہےگا۔
  8. Paid Files via Paid Writers

    مجھ سمیت یقیناً کئی ممبران ایسے ہونگے جو اس فورم کو اپنی تحریروں سے سجانا چاہتے ہونگے۔مگر وہ نہیں لکھ رہے اس کے پیچھے ظاہر ہے کوئی نہ کوئی وجہ ہوگی ایڈمنسٹریٹر ہونے کے ناطے یہ آپکا فرض ہے کہ آپ پہلے وہ وجوہات تلاش کریں جو اس فورم کی ترقی کی راہ میں رکاوٹ ہیں اگر آپ نے وہ وجوہات تلاش کر کے انکا سدباب کردیا تو یقین کریں آپ کو رائٹرز کو معاوضہ دینے کی ضرورت پیش نہی آئیگی۔ ایک طرز تغافل ہے سو وہ ان کو مبارک ایک عرض تمنا ہے سو ہم کرتے رہینگے
  9. دوسری محبت

    ڈونیٹ کردیں۔
  10. دوسری محبت

    ایک عام سے واقعہ کو بیت اچھے انداز میں لکھا گیا ہے۔ شاہ جی کی منظر نگاری کمال کی ہوتی ہے۔ میں شاہ جی کی کئی کہانیاں پڑھ چکی ہوں۔ ہر کہانی اپنی مثال آپ تھی۔
  11. FORUM SARWAY

    کمپیو ٹر
  12. تو پردیس کو ختم کردیا گیا ہے یا اس تک رسائی پر پابندی ہے؟
  13. کیا تمام ممبرز کی ممبر شپ ختم کردی گئی ہے؟
  14. ایک قحبہ خانے پر پولیس کا چھاپا پڑا۔ پولیس نے تمام لڑکیوں کو قحبہ خانے کے باہر لائن میں کھڑا کردیا۔ وہاں سے ایک بڑھیا کا گزر ہوا۔ لڑکیوں کو لائن میں کھڑا دیکھ کر بڑھیا نے ان میں سے ایک لڑکی سے پوچھا بیٹا یہاں کیا ہو رہا ہے۔ لڑکی تپ کر بولی۔ اماں لولی پوپ بٹ رہیں ہیں۔ یہ سنکر بڑھیا بھی لائن میں کھڑی ہوگئی۔ پولیس والا ساری لڑکیوں کے نام پوچھتا ہوا آخر میں پہنچا تو بڑھیا کو لائن میں کھڑا دیکھ کر حیرت سے بولا۔ اماں آپ بھی؟ بڑھیا بولی۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ہاں بیٹا مجھے معلوم ہے کہ میری عمر تو نہیں بس کبھی کبھی میں بھی چوس لیتی ہوں۔