Jump to content
URDU FUN CLUB

TEHREEM

VIP SILVER PRO
  • Content Count

    311
  • Joined

  • Last visited

  • Days Won

    21

TEHREEM last won the day on April 23

TEHREEM had the most liked content!

Community Reputation

820

About TEHREEM

  • Rank
    PRINCESS TEHREEM

Profile Information

  • Gender
    Female
  • Location

Recent Profile Visitors

3,262 profile views
  1. یہ میں نے کیا پڑھا؟؟؟؟؟ ماہی نے یاسر کو مجبور کیا کہ وہ اس کے ساتھ سیکس کرے۔کہانی اور الجھ گئی ہے کہ ماہی آخر کیا چاہتی ہے۔یہ تو طے ہے سیکس تو اب وہ باربار کرے گی اور یاسر کو ضوفی سے دور بھی۔ایک نیا ٹوئسٹ ہے جو بڑا انوکھا ہے اور غیر معمولی بھی
  2. ظالم بندے ہو آپ ڈاکٹر صاب۔ اسد کی ماں اپنی بیٹی کی بات کرنے آئی یہ الگ بات ھے کہ اس کی اپنی نیت صاف دکھ رھی تھی کہ جب تک مہری کی عزت برقرار تھی اس نے کبھئ اس قسم کا کوئ پیغام نھین دیا۔اب جب کہ بیٹی کی عزت لٹ چکی ھے تو اب یاسر یاد آ گیا۔ یہ خودغرضی ھے۔مہری نے بھی اسے کہا ہو گا کہ یاسر ٹھیک ھے۔ یہ تو اب آگے معلوم ہو گا مگر یاسر کا اسے یہ کہنا یاسر کی زیادتی تھی۔ایک طرف تو اس نے اس کی ماں کو اس کی اوقات دکھا دی کہ بیٹی کو چھوڑو اپنی بات کرو، کیوں بھول رہی ہو کہ تم نئ کیا گل کھلایا تھا دوسری طرف اس نے صاف مہری کی طرف سے ایک قسم کا گندا جواب دیا کہ آنٹی جی تم کو میں بس اسی کام کے قابل سمجھتا ہوں۔ دینے کئ بات کرو یہ رشتہ چھوڑو۔ ضوفی کا تعلق میرا خیال ہے نہیں ٹوٹے گا اور بس اس میں بہت بڑے عجیب سے موڑ آئیں گے۔وہ کیا ہوں گے ہم ابھی نہیں سوچ سکتے۔ ماہی کی خاموشی معنی خیز ہے اور ایک بات کھٹک رہی ھے، یہ دو بار سیکس کا کیا چکر ھے، یہ بات چبھ رھی ھے۔ بالی یقیناً ماہی کی ہو گ۔
  3. حسب معمول خان صاب نے اپنی کی ھے،جو جو جس نے سوچا تھا وہ ڈفرنٹ ہو گیا سب۔ مجھے یہ لگا تھا کہ ماھی کا گینگ ریپ ہو گا یا اس کے ساتھ کوئی حادثا ہو گا اور پھر ہمارا ھیرو اس کی مدد کے لیے کچھ کرے گا یا مھری والی کہانی یہاں دوبارہ ہو گی کہ یہ دیکھتا رہ جائے گا ضوفی یا ماہی کا ریپ ہو جانا ہے۔اس کے بعد کہانی ہو گی کہ یاسر اب بھی ضوفی کو اپناتا ھے یا نھیں۔مگر اب ساری کھانی ماہی کے پاس ھے کہ وہ ضوفی کو کیا بتاتی ھے اور جس طرھ اس نے سیکس میں مرضی شو کی ھے مجھے لگتا ھے کہ وہ چپ رھے گی اور یہ بات ماہی دبا لے گی یا یاسر اسے مجبور کرے گا کہ کسی کو مت بتانا۔ ایک چانس یہ بھی ھے کہ ماہی کہہ دے کہ میرا ریپ ہوا ھے اور الزام ان لڑکوں پہ لگ جاے گا۔یاسر بچ جائے گا کیونکہ ماہی اس کو بہن کا لور ہونے کی وجہ سے معاف کر دے گی۔ یہ تو سب ہمارا خیال ھے ہونا الگ ھے مجھے پتا ھے۔ کھانی کا یہ موڑ الگ تھا بہت مگر بڑا سچا تھا۔یاسر ایک نمبر کا ہوس پرست ھے اور ماہی کیا کوئی بھی اس کے پاس ننگی ہوتی تو اس نے یہی کرنا تھا کیونکہ اس نے پھلے بھی ایسا ہی کیا ھے سب کے ساتھ۔ماہی کا کردار معصوم تھا مگر اس واقعے کے بعد اس کی معصومیت ختم ہو گئی ہونی ھے کونکہ عزت لٹ جائے تو معصوم لٹ جاتی ھے۔ کھانی اب بدل جانی ھے اور ہر وقت یہ خطرہ رہنا ھے کہ ضوفی تک بات نہ پہنچ جائے۔یاسر مشکل میں ھے کیونکہ ضوفی کی سہیلی،اس کی نند اور بہن سب کے ساتھ ہو گیا ھے،کسی کا بھی راز کھل گیا تو یاسر گیا کام سے،
  4. واہ کہانی تو اچھی ہے اور اس میں ایکشن بھی آتا دکھ رہا ہے۔ہر کردار کی اپنی ایک ماضی کی بھی کہانی ہے۔
  5. میں نئ عید کے بعد اب کہانی پڑھی ہے۔ڈاکٹر صاھب نے پہلا ظلم تو بےچاری مہری کے ساتھ کر دیا۔کہانی دلچسپ ہو گئی ہے کہ اس مسلے سے کوئی تعلق نہ ھونے کے باوجود یاسر انکا بدلا لے گا۔یہ بڑی اچھی بات ھو گی اسد سے تو کئی امید نھین اب۔ اکری کی بہن والا قصہ بھی جلد پتا چلے گا۔یہ والا جو سین تھا کہ عظمی کے ساتھ بڑا خشک سا سیکس تھا مجھے بہت اچھا لگا ۔۱ تو عظمی کے ساتھ کرنا اس کا خوشی نیں تھی دوسرا اس نے اپنی فرسٹریشن نکالنی تھی اور کوفت ختم کرنی تھی جو مہری کے ساتھ ہونے والے ظلم سے چڑی ھوئی تھی۔ تیسرا اس کو عظمی کو ذلیل بھی کرنا تھا تو اس نے یہ کام اس طرح بھی کیا کہ کوئی پیار اور بہت تکلیف دی کیونکہ وہ اس وقت وہان تھا ہی نہیں، وہ تو فرسٹریسن میں مہری کے ساتھ تھا یا اسد کی مان کے ساتھ۔پھر وہ اکری کی بہن کے ساتھ تھا۔انسان کا ذہن جا ہوتا ہے اس کے احساس بھی وہیں ہوتئ ہیں۔یہ بڑی مہارت والی سوچ تھی اور خان صاھب ہی ایسا سوچتے ہین۔ میری پیشن گوئی بھی سچ ہوئی کہ منجی ٹھکنے والی ہ تو مہری کی تو ٹھک گئی۔ ماہی کا بھی بہت برا قصہ ہو گا مگر میں ایک بات جانتی ہون کہ وہ مہری جیسا نہیں ہو گا، داکٹر صاھب ایک جیسی سچویشن ری پیٹ نہیں کرتے، کچھ الگ ہو گا مگر ہو گا ماہی کے ساتھ جس کا ضوفی پہ گہرا اثر ہو گا۔ ہو سکتا ہے کہ اس کی ڈیتھ ہو جائےیا کچھ بہت غلط۔ یا ماہی کی طرف سے سویرا کا کوئی لنک بن جائے اور یاسر کی ساری کارستانی ضوفی کو معلوم ہو جائے۔ ہم جتنے اندازے لگائین گے سب نے غلط ہو جاناھے
  6. یہ تو سچ ہے کہ ایسا بندہ زیادہ دیر چھپا نھیں رہتا اور سب کو اس کی ایسی حرکتوں کا پتا چل جاتا ہے۔ ڈاکٹر صاحب میرے پسندیدہ رائیٹر ہونے کے ساتھ ساتھ مجھے سب سے زیادہ دل دکھانے والے بھی ہیں۔ مجھے جو بھی کردار اچھا لگتا ہے پتا چلتا ہے اگلی اپڈیٹ میں اس کا قتل ہو گیا ہے۔ جس پہ بڑا دل دکھتا ہے، یہ ڈاکٹر صاحب کی عادت ہے کہ بندے کو کسی سے انس کراتے ہیں اور پھر جب بندہ اس کردار میں اپنائیت محسوس کرتا ہے بس پھر ٹھاہ۔ یہی اس کہانی میں ہو گا۔ مجھے ڈر لگ رہا ہے۔ یہ بات بھی درست ہے کہ کمنٹ ہونے چاہیئں۔ جس لڑکی کو ثانیہ شامل کر رہی ہےجہاں تک مجھے اندازہ ہے خان صاحب کے قلم کا اس کو پہلی بار ہی بہت نمایاں انداز میں شو کریں گے۔ یہ کسی چیز کا بیس بنا رہے ہیں ڈاکٹر صاحب۔ اوپر سے کہانی اب تک بنا ایکشن کے تھی، ایک روٹین تھا کہ ایک بندہ تھا اور ایک کے بعد ایک لڑکی۔ اب ایسا ہوتا نہیں دکھ رہا۔
  7. کچھ سوال ہیں میرے اگر خان صاحب جواب دین تو۔ پہلا تو یہ کہ عبیحہ کا کردار بالکل بدل گیا ہے،اب وہ بہت پیار سے پیش آ رھی ہے پھلے تو بات بات پہ عجیب بدتمیزی سے پیش آتی تھی۔ اب وہ خود باتھ روم گھس گئی۔ایسا کیوں؟ آج تک یاسر نے کسی کو نہیں بتایا تھا کہ وہ کس کس لڑکی کے ساتھ کرتا ہے،اب سلمان کو بھی بتا دیا اور نسرین کو بھی بتا دیا،ثانیہ کو بھی بتا دیا۔سب کو کھل کے بتا رھا ہے۔ اس طرح تو اس کا راز افشا ہو جائے گا اور مسلہ ہو جائے گا۔ناجائز تعلقات مین راز ہی تو شرط ہوتی ہے تو ایسا کیوں کہ یاسر اب ان لڑکیوں کے بارے میں چھپا نہیں رہا۔ تیسرا مجھے اب کہانی میں ہر لڑکی خطرے میں دکھ رہی ہے اور میرا اندازہ غلط نہیں ہے تو ضوفی کے ساتھ جو ہو گا وہ بھی کم حیرت انگیز نہیں ہوگا مگر پہلے ثانیہ کا نمبر ہے اور بڑا ظالم نمبر بنے گا۔ نسرین اور عظمیٰ اور ان کی ماں کی تو یاسر کے ہاتھوں اب بینڈ بجے گی یہ تو کنفرم ہے۔ مجھے بس یہ بتا دیں کہ کہانی میں اتنے موڑ جو کہ اچھے اور چونکا دینے والے ہیں مگر بہت انوکھے ہیں،وہ کس طرف جائیں گے اور یاسر کا کرادر بھی بدل رہا ہے۔
  8. یہ کہانی بھی بالکل پچھلی جیسی ہے کہ مسرت ہی نے نئی لڑکی تلاش کر کے دی اب بس سیکس باقی ہے۔
  9. مجھے بھی پردیس ہوس اور آہنی گرفت تک رسائی چاہیے۔پلیز ہیلپ ایڈمن صاحب
  10. کہانی اچھی ہے اور سادہ بھی مگر اس میں کوئی سنسنی نہیں ہے۔ ایک لڑکا ہے اور اس کو ایک عورت مل گئی جس نے اسے اپنی بھانجی کے ساتھ سیٹ کیا ہے۔ اگر اس می ں کوئی سسپنس ہوتا کوئی مشکلات ہوتی تو کہانی ایک دم زبردست ہو جاتی۔ پلیز اس اینگل سئ بھی سوچے اپنی اگلی کہانی میں دیکھے
  11. بہت دن بعد فورم کا چکر لگایا، یہ کہانی پہلے پڑھی تھی، آج یہ جان کر حیرانی ہوئی کہ اسے خان صاحب لکھ رہے ہیں۔ ویسے تو یہ درست نہیں کیونکہ ان کی اپنی کہانیوں بھی ہیں،ان کو وہاں وقت دینا چاہیے مگر پھر سوچا کہ اکیلی ایک ہی فری کہانی تھی اگر خان صاحب نہیں لکھتے تو فری سیکشن تو مکمل ڈیڈ ہو جاتا۔ اس لیے شکریہ آپ کا خان صاحب کہانی کی رفتار واقعی تیز ہے اور اسی تیزی میں مزا ہے۔ پہلے کہانی میں بہت لمبی لمبی باتیں ہوتی ہیں، نوک جھونک بھی کئی کئی صفحے کی ہوتی تھی۔ ادھر ادھر کی باتوں کے بعد سیکس ہوتا تھا اور ایک جیسا۔ جس میں ہیرو سے کروا کر ہر عورت چاہے وہ اس کی ماں کی عمر کی ہو۔ وہ روتی تھی کہ اتنا بڑا؟؟؟؟؟؟ یہ کیسے ہو سکتا ہے کہ اس کی ماں کی عمر کی عورت کو بھی اتنا درد ہو کہ وہ کہے کہ تم نے مجھے اتنا درد دیا؟؟؟؟؟؟ مگر ساتھ ساتھ کہانی میں اچانک والے موڑ بھی کم ہوتے تھے، ہیرو کے علاوہ پورے شہر میں کسی کو سیکس نہیں کرنا آتا تھا بلکہ کسی کا کھڑا نہیں ہوتا تھا۔ایک بار ایک لڑکا سویرا کو کھیت میں لے تو گیا مگر اس کے اندر نہیں کر سکا؟؟؟؟؟؟ یہ کیسے ہوا؟؟؟؟؟ سویرا نے بھی دیکھا کہ کوئی اور ڈال رہا ہے تو یہ چلے گا، مطلب اچھی کہانی میں یہ بڑا نقص تھا۔ خان صاحب سے مجھے سب سے بڑا گلہ یہی ہوتا ہے کہ وہ تمام کرداروں کی جب تک منجی نہیں ٹھونکا دیتے چین سے نہیں بیٹھتے۔ ہیرو بھی جوتے کھاتا ہے اور ہیروئن بھی ہر لحاظ سے مار کھاتی ہے۔ اب یہی کہانی اٹھا لیں، کہانی پکڑتے ہیں عظمیٰ کا راز کھول دیا، نسرین پہ ،عبیرہ پہ،عبیحہ پہ،یہاں تک کہ اس کی ماں پہ۔ نسرین کا منا کر تھریسم اور عظمیٰ کا زبردستی۔ ایک ہی دن میں۔عبیرہ کا راز جاننا اور عبیحہ کا نئے انداز میں پیش آنا بھی بہت نیا ٹرن ہے۔مجھے یہ کہنے میں کوئی شک نہیں کہ عظمیٰ نسرین اور فوزیہ شدید ذلیل ہوں گی۔ ضوفی کی بھی کوئی اچھی نہیں ہونی کیونکہ یہ خان صاحب کی کہانی ہے اور اس میں امن شانتی کو تو بھول جاؤ۔اب سے ہر دن تباہی اور رسوائی ہو گی۔
  12. میرا خیال ہے کہ اگر پردیس کو فری کرنا ہے تو ہوسٹنگ فیس کیسے پوری کی جائے اس کے متعلق ممبران سے رائے لے لینی چاہیے۔ ویسے مجھے تو آئیڈیا پسند آیا۔ اب کتنا ممکن ہے وہ پتا نہیں۔
  13. بہت افسوس ناک واقعہ ہے یہ۔ مجھے تو اتنا افسوس ہوا کہ ذہن سے ہٹتا ہی نہیں تھا۔ اسے طرح ایک ڈرامے ایسی ہے تنہائی میں کوما میں لڑکی کے ساتھ سوئیپر ریپ کر دیتا ہے اس سے تو انتہا کا خوف آیا۔ ڈاکٹر صاحب آپ کچھ شئیر کیجیے اس قسم کے واقعے پہ کسی سٹوری کی صورت میں
  14. مجھے تو دونوں ڈفرنٹ لگتے ہیں۔ جمیل بہت کانفیڈنٹ تھا، وہ کسی کی سنتا یا مانتا نہیں تھا۔ لڑکیوں کے سامنے بھی پینڈو ہونے کے باوجود بہت بولڈ تھا۔ کاشف ہے تو ویسا ہی مگر ڈبل ماینڈ نظر آتا ہے۔ روزی کے ساتھ سیکس کرتا رہا اور سوچا کہ کچھ نہیں ہو گا۔ یہاں جمیل ہوتا تو اب تک روزی کا شوہر ہاسپٹل میں ہوتا۔ پھر کبھی وہ بھابھی کو اگنور کرتا ہے اور پھر اسے فیل ہوتا ہے کہ وہ تو اچھی ہے۔ اس کا ہر چیز کا پہلا اندازہ غلط ہو جاتا ہے۔ کامران کو بھی غلط سمجھا اور روزی کی پریشان کو بھی وہم سمجھا۔
  15. what the f....... dr sb yeh kia kar diya?????? اس بیچاری نے کیا کیا تھا ڈاکٹر صاحب؟؟؟؟ اتنا بڑا ظلم؟؟؟؟ بہت شدید سفاک سوچتے ہیں آپ۔ وہ بس کریکٹر ہے اور مجھے رونا آ رہا ہے۔ اس کو کسی طرح بچا لیتے ؟؟؟ میں نہیں پڑھنے والی اب یہ کہانی۔
×
×
  • Create New...