Jump to content
URDU FUN CLUB

Search the Community

Showing results for tags 'urdu sex story'.



More search options

  • Search By Tags

    Type tags separated by commas.
  • Search By Author

Content Type


Forums

  • ...::: U|Fun Announcements Club :::...
    • News & ­Announcements
    • Members Introduction
    • Complains & Suggestions
  • ...::: U|Fun General Knowledge Club :::...
    • General Knowledge
    • Cyber Shot (No Nude)
  • ...::: U|Fun Digital Library Club :::...
    • Own Writers Urdu Novels
    • Social New Writers Club
    • Urdu Poetry Ghazals Poems
  • ...::: U|Fun Buy and Sale Club :::...
    • Buy & Sale Your Products
  • ...::: U|Fun Adult Multimedia Club [Strictly For 18+] :::...
    • Users Chit Chat + (18)
    • Sex Advice with Doctors
    • Urdu Sexy Jokes Poetry
  • ...::: U|Fun Urdu Inpage & Pic Sex Stories Club Normal Standard :::...
    • Urdu Adult Inpage Stories
    • Roman Urdu / Hindi Sex Stories
    • Picture Stories (By UFC Writers)
    • Incomplete Stories (No Update)
  • ...::: U|Fun Premium Membership Subscribe Club :::...
    • Purchase VIP Membership
  • ...::: U|Fun High Standard Premium Club :::...
    • Pardes Serial Novel VIP Edition
    • Hawas Serial Novel VIP Edition
    • Aahni Grift Serial Novel VIP Edition
    • Kamran and Head Mistress VIP Edition
  • ...::: U|Fun Urdu Inpage & Pic Stories High Standard Paid Files :::...
    • Urdu Inpage Stories Paid Files
    • Urdu Picture Stories Paid Files
  • ...::: U|Fun Recycle Bin Club :::...
    • Recycle Bin

Categories

  • Urdu Sex Stories High Standard
  • Urdu Pic Stories High Standard

Product Groups

  • Converted Subscriptions
  • Cyber Monday Paid Files Offers
  • Old Membership Renewal Packeges
  • New Membership

Find results in...

Find results that contain...


Date Created

  • Start

    End


Last Updated

  • Start

    End


Filter by number of...

Joined

  • Start

    End


Group


Found 2 results

  1. نوید پچیس سال کا ایک بھرپور جوان لڑکا تھا ، چھ فٹ کے قریب قد ، رنگ گورا ، چوڑی چھاتی اور دیکھنے میں بہت خوبصورت تھا - لڑکیاں پہلی نظر میں ہی اس پر فدا ہونے کو تیار ہو جاتی تھیں لیکن وہ خود بہت شرمیلا تھا اسلئے آج تک وہ کسی کنواری چوت سے مستفید نہیں ہو سکا تھا - نوید بچپن میں ہی بری صحبت کا شکار ہو گیا تھا اور بری صحبت نے اس پر خوب رنگ جمایا تھا ، رنڈی بازی کا بہت شوقین تھا وہ اپنے شہر کے سارے کوٹھوں سے واقف تھا، اس کی سارے دوست عیاش طبعیت کے مالک تھے اسلئے وہ خود بھی عیاشی کا دلدادہ تھا، لیکن گھر میں اس کا امیج بہت اچھا تھا کیونکہ وہ سارے پنگے دن کو ہی نمٹاٹا تھا اور رات کو جلد ہی گھر آ جاتا تھا - بکرا عید قریب آ رہی تھی اس کا والد بہت مصروف تھا اور اس کے پاس قربانی کا جانور لینے کے لئے بھی وقت نہیں تھا اس لئے اس نے نوید کو پچیس ہزار دئیے کہ بیٹا بکرا منڈی سے قربانی کے لئے بکرا لیتے آنا - نوید نے سعادت مندی سے سر ہلایا اور پیسے پکڑ لئیے - دوپہر ایک بجے کے قریب گھر سے بکرا لینے کی غرض سے نکلا تو راستے میں اسے راشد مل گیا - یہ راشد ہی تھا جس نے نوید کو رنڈی بازی کی طرف مائل کیا تھا ،نوید راشد سے : ابے سالے کہاں سے آ رہا ھے ؟ ریشم بائی کے کوٹھے کے پاس سے گزر رہا تھا تو ھیلو ہائے کے لئے اندر چلا گیا ، وہاں تو اک پری چہرہ دیکھ کر دنگ ہی رہ گیا ، کیا زبردست پٹاخہ لڑکی ھے ، گورا رنگ ، لمبا قد اور چھاتی ! . . . چھاتی تو قیامت ھے قیامت ، دیکھ کر لن میں ہلچل ہونے لگی تھی ، راشد نے نوید کو بتایا تو نوید کے منہ میں بھی پانی بھر آیا - یار پھر تم نے اس کی پھدی لی ؟ نوید نے راشد سے پوچھا - یار وہ مزے لے لے کر چودنے والی چیز ھے ، چار پانچ گھنٹے کے لئے اسے بک کر کے چودوں گا ابھی میرے پاس پندرہ سو تھے پانچ گھنٹے کے دس ہزار لیتی ھے راشد نے نوید کو بتایا تو نوید کے لن نے بھی انگڑائی لی اور ان دیکھی حسینہ کی چوت لینے کا ارادہ بنا لیا - یار راشد اس وقت میرے پاس پچیس ہزار ہیں لیکن میں بکرا خریدنے جا رہا ھوں لیکن تم نے جتنی تعریفیں کی ہیں تو میرا دل کر رہا ھے بکرے کی جگہ اس حسینہ کی چوت لے لوں - نوید نے کہا تو راشد نے کہا چل یار ابھی چلتے ہیں اس کے پاس صبر مجھ سے بھی نہیں ہو رہا ، دس ہزار تم مجھ سے کل لے لینا اور بکرا بھی کل لے لینا، نوید نے بھی اپنی رضامندی دے دی اور وہ دونوں ریشم بائی کے کوٹھے /اڈے کی طرف چل دئیے - راشد اور نوید ریشم بائی کے کوٹھے میں داخل ہوئے تو سامنے تین چار لڑکیاں بیٹھی تھیں ، نوید ان سب سے واقف تھا اور ان سے سیکس بھی کیا ہوا تھا ، تھیں تو وہ بھی اچھی شکل صورت کیں لیکن ان کے انداز و اطوار گشتیوں جیسے تھے ، مطلب چہرے کے تاثرات میں مصنوعی پن تھا جسے دیکھ کر ہی پتا چل جاتا ھے کہ یہ گشتیاں ہیں - نوید نے راشد کی طرف سوالیہ نظروں سے دیکھا کہ کہاں ھے وہ لڑکی جس کی تعریف میں تم زمین آسمان کے قلابے ملا رہے تھے ؟ راشد نے وہاں بیٹھی ہوئی ایک گشتی سے پوچھا جو نئی لڑکی ادھر آئی ھے وہ کہاں ھے ؟ گشتی مسکراتے ہوئے: لگتا ھے دل میں اتر گئی ھے نیلم ؟ وہ واش روم میں ھے ابھی آتی ھے - اسی اثنا میں ریشم بائی بھی ایک کمرے سے نکل کر آتی ھے اور نوید کو دیکھ کر کہتی ھے ، " سوھنیو بہت عرصے بعد ادھر کا چکر لگایا ھے آج " - بس جی آنے کا وقت ہی نہیں ملا ، نوید نےکہا تو راشد درمیان میں بول پڑا، آج بھی میں ہی اسے لے کر آیا ھوں ، نئی لڑکی دیکھ کر صبر نہیں ھو رہا تھا -ریشم بائی: نیلم ھے ہی ایسی جو اسے دیکھ لے رات اسے نیند ہی نہیں آتی - نیلم کے آگے تو پریاں بھی پانی بھرتی نظر آئیں - ریشم بائی نئی آنے والی لڑکی کی تعریفوں کے پل باندھ رہی تھی کہ اسی اثنا میں نیلم ایک طرف سے آتی دیکھائی دی جسے دیکھ کر نوید کی اوپر کی سانس اوپر اور نیچے کی نیچے رہ گئی - معصوم شکل ، گورا رنگ ، اونچا قد ، جسم کے نصیب و فراز غضب ڈھا رہے تھے ، اونچی چھاتیاں ، نیلم قیامت تھی قیامت ! راشد اور ریشم بائی کی تعریف سے بڑھ کر حسین تھی نیلم - نیلم کی سب سے اہم بات یہ تھی کہ اس کے چہرے پر گشتیوں والی کوئی بات نہ تھی اس کے چہرے پر کسی قسم کا کوئی میک اپ نہیں تھا حتی کہ ہونٹوں پر لپ سٹک بھی نہیں تھی اور وہ ایک مکمل گھریلو لڑکی نظر آ رہی تھی اور نوید کے دل میں اس کی خوبصورتی اور سادگی گھر کر گئی - اس نے دونوں سے ایک مسکراہٹ کے ساتھ ہاتھ ملایا اور ایک طرف جا کر بیٹھ گئی - راشد نے ریشم بائی سے کہا کہ ہم نیلم کے ساتھ بیٹھنا چاہتے ہیں تو اس نے کہا ایک ٹائم کا پندرہ سو اور نائٹ کا پچیس ہزار - راشد نے کہا کہ ہم اسے چار پانچ گھنٹوں کے لئے لے جانا چاہتے ہیں ،
×
×
  • Create New...