Jump to content
Good Morning ×
URDU FUN CLUB
khoobsooratdil

فیس بک کی دُنیا

Recommended Posts

یہ فیس بک کی دُنیا بھی نابڑی عجیب ھے،،
جس کو بیٹی کہہ کر پکارو ،، امی سے بڑی نکلتی ھے،،
باجی کہہ دو تو بیٹی کی کلاس فیلو نکلتی ھے،،
اس لئے پکی بات نہیں پروفائل لڑکی کی ھے،،
نام بھی اسلامی ھے اقرأ کچھ ھےفوٹو بھی مکمل پردے والا ھے
مگر فرینڈز کی تعداد ھزاروں میں ھے،، لڑکی اسٹیٹس پر لکھتی ھے، آآآآآآآآچھــــــو ! اور پھر لکھتی ھے الحمد للہ !!
بس جناب پھر وہ یرحمک اللہ کی موسلا دھار بارش ھوتی ھے کہ رھے نام سائیں کا !
اور اگر اس جگہ کوی لڑکا لکھے تو کمنٹ آتے ہیں کہ تیاری کر لو موت کا فرشتہ آنے والا ہے
لڑکی کچھ دن نہ آیے تو اُس کے وال پر میسج لکھے جاتے ہیں کہاں ہو مس یو etc
اور لڑکا نہ آیے تو کسی دوست تک کو پروا نہیں کہ چلو کوئی وال پر یا ین بکس میں میسج بھیج دیں
لڑکی کچھ عرصہ اسٹیٹس اپ ڈیٹ کرے کہ I M Back فریئنڈز ڈو یو مس می تو کمنٹس کی لائین لگ جاتی ہے ویلکم بیک ،رئیلی مس یو

اور اگر کوئی لڑکا کرے ک I M Back تو کمنٹ کچھ اس طرح کے آتے ہیں اؤے تو مریا نیں ہالے ۔ اؤے تو فیر آگیا ابھی زندہ ہو کیا ہم نے تو تیرے کُل بھی کروا دیے تھے

وہ پوچھتی ھے،، دوستو ! آج آپ کے شہر کا درجہ حرارت کیا ھے ؟ لوگ جھٹ پٹ لکھنا شروع کرتے ھیں،، وہ پوچھتی ھے موسم کیسا ھے لوگ ،،دل کا موسم لکھنا شروع کر دیتے ھیں،،
اور اگر اس جگہ کوی لڑکا موسم کا پوچھے تو جواب آتے ہیں جا یار کم کر اپنا اسی اگے بڑے تنگ بیٹھے آن اُتوں تو آ گیا موسم دا حال پوچھن
وہ پوچھتی ھے،دوستو آج کس شہر میں ھو ؟ اور لوگ گلی اور بلاک تک لکھ دیتے ھیں
!! عجیب واللہ عجیب !

Share this post


Link to post
Share on other sites

اردو فن کلب کے گولڈ  ممبرز اور ماسٹر ممبرز کے لیئے ایک لاجواب تصاویری کہانی ۔۔۔۔۔ایک ہینڈسم اور خوبصورت لڑکے کی کہانی۔۔۔۔۔جو کالج کی ہر حسین لڑکی سے اپنی  ہوس  کے لیئے دوستی کرنے میں ماہر تھا  ۔۔۔۔۔کالج گرلز  چاہ کر بھی اس سےنہیں بچ پاتی تھیں۔۔۔۔۔اپنی ہوس کے بعد وہ ان لڑکیوں کی سیکس سٹوری لکھتا اور کالج میں ٖفخریہ پھیلا دیتا ۔۔۔۔کیوں ؟  ۔۔۔۔۔اسی عادت کی وجہ سے سب اس سے دور بھاگتی تھیں۔۔۔۔۔دو سو سے زائد صفحات پر مشتمل ڈاکٹر فیصل خان کی اب تک لکھی گئی تمام تصاویری کہانیوں میں سب سے طویل کہانی ۔۔۔۔۔کامران اور ہیڈ مسٹریس۔۔۔اردو فن کلب کے  گولڈ اور ماسٹر سیکشن میں  پوسٹ کی جا رہی ہے۔

ہاہاہا - سب لکیر کے فقیر ہیں


 


ہم ہوئے تم ہوئے  کہ میر ہوئے


اس کی زلفوں کے سب اسیر ہوئے


Share this post


Link to post
Share on other sites

Create an account or sign in to comment

You need to be a member in order to leave a comment

Create an account

Sign up for a new account in our community. It's easy!

Register a new account

Sign in

Already have an account? Sign in here.

Sign In Now

×
×
  • Create New...