Jump to content
URDU FUN CLUB
Sign in to follow this  
irfan1397

پیار --- ہا ہا ہا ہا

Recommended Posts

تمام ممبرز فورم پر موجود ایڈز پر ضرور کلک کریں تاکہ فورم کو گوگل کی طرف سے کچھ اررننگ حاصل ہو سکے۔ آپ کا ایک کلک روزانہ فورم کے لیئے کافی ہے

پیار تو واقعی ایک حقیقت ہے۔وہ آج کے دور میں بھی بکثرت پایا جاتا ہے۔


مگر ہر بندہ جو پیار کا نام لے کر تعلق بناتا ہے وہ حقیقت میں پیار نہیں کرتا۔


Share this post


Link to post
Share on other sites

ہر انسان کی پیار کی الگ ہی تعریف اور تشریح ہے۔ میرے مطابق تو پیار وہ ہے جو انسان کو ہر اس احساس سے عاری کردے جو اس کی عام زندگی کا حصہ ہوں۔


کسی کو یہ احساس نہ رہے کہ اچھا ہوں یا برا،کالا ہوں یا گورا،امیر ہوں یا غریب۔بس جس سے پیار ہو بس اسی کے متعلق ہر سوچ ہو اور اسی کے متعلق خیال۔


جب یہ کیفیت ہو تو بندہ پیار میں ہوتا ہے۔جس انسان کے لیے یہ کیفیت ہو وہ محبوب ہوتا ہے اور اسی سے محبت ہوتی ہے۔

Share this post


Link to post
Share on other sites

"ٹھہرئیے ! آپ کیا چاہتے ہیں ؟ "

"پیار-"

"کس کا پیار ؟"

"عورت کا- "

"عورت کے تو بہت سے روپ ہیں- عورت ماں ھے ، بہن ھے ،بیوی ھے - چلو فرض کرو . . . .

اگر آپ کو ماں کا پیار مل جاتا ھے تو ؟

تو دنیا و آخرت میرے لئے جنت ھے -

اگر بہن کا پیار مل جاتا ھے تب ؟

تو میری پگ محفوظ رہے گی -

لیکن اگر بیوی کا پیار مل جائے تو ؟

تو باقی سب کچھ چھوڑ دوں گا -آخر کچھ پانے کے لئے کچھ کھونا بھی تو پڑتا ھے -

Share this post


Link to post
Share on other sites

Please login or register to see this quote.

نہیں اگر پیار ہے تو انسان کو وصل کی تمنا نہیں رکھنی چاہیے۔

جس سے محبت ہو ضروری نہیں کہ وہ بھی آپ سے محبت کرے۔ 

اگر وہ بھی جواب میں محبت کرتا ہے تو کیا کہنے۔۔۔اس سے حسین کوئی چیز نہیں۔

اگر دونوں محبت کرتے ہیں تو یہ بھی ضروری نہیں کہ ان کا ملن ہو۔

کسی بھی صورت میں محبت ناکام نہیں ہوئی۔ محبت کے لیے وصل شرط نہیں ہے۔

کامیاب محبت وہ ہے جس میں انسان کسی کو ایسے چاہے کہ عشق کی گہرائی میں اتر جائے۔

ناکام محبت وہ ہے جس میں انسان کسی بھی وجہ سے محبت سے دستبردار ہو جائے۔

Share this post


Link to post
Share on other sites

یہ وہ لوگ ہوتے ہیں جو دراصل محبت کا مطلب نہیں سمجھتے۔ محبوب کا وصل ہوا تو ٹھیک، نہیں ہوا تو خود کشی۔


خدا کی محبت دیکھ لیجیے۔وہ کونسا ہمیں مل جاتا ہے،بس احساس ہوتا ہے کہ ہمیں اس سے محبت ہے تو وہ ہر وقت ہمارے ساتھ ہے۔


جب سوچ لیا کہ وہ ساتھ ہے تو سچ مچ وہ ساتھ ہوتا ہے۔


محبوب کا بھی یہی ہے کہ جب سوچ لیا کہ وہ ساتھ ہے تو کیا فرق پڑتا ہے کہ اس کا جسم ملا کہ نہیں۔


جو وصل کو محبت سمجھتے ہیں دراصل وہ فانی محبت کو محبت سمجھتے ہیں۔ایسی محبت بڑی کمزور ہوتی ہے۔


کل کو محبوب ویسا نہ رہے جیسے آج ہے تو محبت میں بھی کمی آ جاتی ہے۔


Share this post


Link to post
Share on other sites

Create an account or sign in to comment

You need to be a member in order to leave a comment

Create an account

Sign up for a new account in our community. It's easy!

Register a new account

Sign in

Already have an account? Sign in here.

Sign In Now
Sign in to follow this  

×