Jump to content
URDU FUN CLUB
Sign in to follow this  
Play_Boy007

ملٹیپل اسکلوروسس کے مریضوں کیلۓ

Recommended Posts

السلام علیکم دوستو

ﻟﻨﺪﻥ

ﻣﯿﮟ

ﮈﺍﮐﭩﺮ

ﺳﭩﯿﻢ

ﺳﯿﻠﺰ

ﮐﮯ

ﺫﺭﯾﻌﮯ

ﻣﻠﭩﯿﭙﻞ

ﺍﺳﮑﻠﻮﺭﻭﺳﺲ)ﺍﯾﻢ ﺍﯾﺲ(ﮐﮯ

ﻣﺮﯾﻀﻮﮞ ﮐﮯ ﻋﻼﺝ ﮐﮯ ﻟﯿﮯ ﺍﯾﮏ

ﺑﮍﮮ ﺗﺠﺮﺑﮯ ﮐﻮ ﺟﻠﺪ ﺷﺮﻭﻉ ﮐﺮﻧﮯ

ﮐﯽ ﺗﯿﺎﺭﯼ ﮐﺮ ﺭﮨﮯ ﮨﯿﮟ۔

ﺍﺱ ﺗﺠﺮﺑﮯ ﻣﯿﮟ ﯾﻮﺭﭖ ﺑﮭﺮ ﺳﮯ

ﺍﯾﮏ ﺳﻮ ﭘﭽﺎﺱ ﻣﺮﯾﻀﻮﮞ ﮐﻮ

ﺷﺎﻣﻞ ﮐﯿﺎ ﺟﺎﺋﮯ ﮔﺎ۔

ﺍﺱ ﺗﺠﺮﺑﮯ ﻣﯿﮟ ﺍﺱ ﺑﺎﺕ ﮐﺎ ﺟﺎﺋﺰﮦ

ﻟﯿﺎ ﺟﺎﺋﮯ ﮔﺎ ﮐﮧ ﺁﯾﺎ ﻣﻠﭩﯿﭙﻞ

ﺍﺳﮑﻠﻮﺭﻭﺳﺲ ﮐﮯ ﻣﺮﯾﻀﻮﮞ ﮐﮯ

ﻋﻼﺝ ﮐﮯ ﻟﯿﮯ ﺳﭩﯿﻢ ﺳﯿﻠﺰ ﮐﺎ

ﻣﺤﻔﻮﻅ ﻃﺮﯾﻘﮯ ﺳﮯ ﺍﺳﺘﻌﻤﺎﻝ

ﮐﯿﺎ ﺟﺎﺳﮑﺘﺎ ﮨﮯ۔

smvsr4.jpg

ﮈﺍﮐﭩﺮﻭﮞ ﮐﻮ ﺍﻣﯿﺪ ﮨﮯ ﮐﮧ ﺍﯾﻢ ﺍﯾﺲ

ﮐﯽ ﻭﺟﮧ ﺳﮯ ﺩﻣﺎﻍ ﺍﻭﺭ ﺭﯾﮍﮪ ﮐﯽ

ﮨﮉﯼ ﮐﻮ ﭘﮩﭽﻨﮯ ﻭﺍﻟﮯ ﻧﻘﺼﺎﻥ ﮐﻮ ﻧﮧ

ﺻﺮﻑ ﮐﻢ ﺍﻭﺭ ﺭﻭﮐﺎ ﺟﺎ ﺳﮑﺘﺎ ﮨﮯ

ﺑﻠﮑﮧ ﺻﺤﺖ ﯾﺎﺑﯽ ﺑﮭﯽ ﻣﻤﮑﻦ ﮨﮯ۔

ﻟﻨﺪﻥ ﮐﮯ ﺍﻣﭙﯿﺮﯾﻞ ﮐﺎﻟﺞ ﺳﮯ

ﻣﻨﺴﻠﮏ ﮈﺍﮐﭩﺮ ﭘﺎﻭﻟﻮ ﻣﻮﺭﺍﺭﻭ ﮐﺎ

ﮐﮩﻨﺎ ﮨﮯ ﮐﮧ ﺍﺱ ﺑﺎﺕ ﮐﮯ ﭘﮩﻠﮯ ﺳﮯ

ﺷﻮﺍﮨﺪ ﻣﻮﺟﻮﺩ ﮨﯿﮟ ﮐﮧ ﺍﺱ ﺑﯿﻤﺎﺭﯼ

ﮐﮯ ﻋﻼﺝ ﮐﮯ ﻟﯿﮯ ﺳﭩﯿﻢ ﺳﯿﻞ ﻣﻮﺛﺮ

ﺫﺭﯾﻌﮧ ﮨﻮ ﺳﮑﺘﺎ ﮨﮯ۔

ﺗﺤﻘﯿﻖ ﮐﺎﺭ ﻣﺮﯾﻀﻮﮞ ﮐﯽ ﮨﮉﯾﻮﮞ

ﮐﮯ ﮔﻮﺩﮮ ﺳﮯ ﺳﭩﯿﻢ ﺳﯿﻞ ﺣﺎﺻﻞ

ﮐﺮ ﮐﮯ ﻟﯿﺒﺎﭨﺮﯼ ﻣﯿﮟ ﺍﻥ ﮐﯽ

ﭘﺮﻭﺭﺵ ﮐﺮﯾﮟ ﮔﮯ ﺍﻭﺭ ﭘﮭﺮ ﺍﻧﮩﯿﮟ

ﻣﺮﯾﻀﻮﮞ ﮐﯽ ﺧﻮﻥ ﻣﯿﮟ ﺩﺍﺧﻞ ﮐﺮ

ﺩﯾﮟ ﮔﮯ۔

ﺍﺱ ﺑﺎﺕ ﮐﯽ ﺍﻣﯿﺪ ﮐﯽ ﺟﺎ ﺭﮨﯽ ﮨﮯ

ﮐﮧ ﺳﭩﯿﻢ ﺳﯿﻞ ﺍﻧﺴﺎﻧﯽ ﺩﻣﺎﻍ ﺗﮏ

ﭘﮩﻨﭻ ﮐﺮ ﺍﯾﻢ ﺍﯾﺲ ﮐﯽ ﻭﺟﮧ ﺳﮯ

ﭘﮩﭽﻨﮯ ﻭﺍﻟﮯ ﻧﻘﺼﺎﻥ ﮐﻮ ﺩﺭﺳﺖ ﮐﺮ

ﺩﯾﮟ ﮔﮯ۔

ﺑﺮﻃﺎﻧﯿﮧ ﮐﯽ ﺍﯾﻢ ﺍﯾﺲ ﺳﻮﺳﺎﺋﭩﯽ

ﻧﮯ ﺑﮭﯽ ﺍﺱ ﺗﺤﻘﯿﻖ ﮐﮯ ﻟﯿﮯ ﺭﻗﻢ

ﻓﺮﺍﮨﻢ ﮐﯽ ﮨﮯ۔

ﺍﯾﻢ ﺍﯾﺲ ﺳﻮﺳﺎﺋﭩﯽ ﮐﻮ ﺍﻣﯿﺪ ﮨﮯ ﮐﮧ

ﺍﻥ ﻧﺌﮯ ﺗﺠﺮﺑﺎﺕ ﺳﮯ ﻣﻠﭩﯿﭙﻞ

ﺍﺳﮑﻠﻮﺭﻭﺳﺲ ﮐﮯ ﻣﺮﯾﻀﻮﮞ ﮐﮯ

ﻟﯿﮯ ﺍﯾﮏ ﺑﺎﻗﺎﻋﺪﮦ ﻃﺮﯾﻘۂ ﻋﻼﺝ

ﺳﺎﻣﻨﮯ ﺁ ﺳﮑﮯ ﮔﺎ۔

ﺍﺱ ﻣﺮﺽ ﻣﯿﮟ ﺟﺴﻢ ﮐﺎ ﺩﻓﺎﻋﯽ

ﻧﻈﺎﻡ ﺩﻣﺎﻍ ﻣﯿﮟ ﻣﻮﺟﻮﺩ ﺧﻠﯿﻮﮞ

ﺍﻭﺭ ﻣﺎﺋﻠﯿﻦ ﻧﺎﻣﯽ ﻣﺎﺩﮮ ﮐﻮ ﻧﻘﺼﺎﻥ

ﭘﮩﭽﺎﻧﺎ ﺷﺮﻭﻉ ﮐﺮ ﺩﯾﺘﺎ ﮨﮯ ﺟﺲ ﮐﮯ

ﻧﺘﯿﺠﮯ ﻣﯿﮟ ﺩﻣﺎﻍ ﺍﻭﺭ ﺟﺴﻢ ﮐﮯ

ﺩﯾﮕﺮ ﺣﺼﻮﮞ ﮐﮯ ﺩﺭﻣﯿﺎﻥ ﭘﯿﻐﺎﻡ

ﺭﺳﺎﻧﯽ ﮐﺎ ﻧﻈﺎﻡ ﻣﺘﺎﺛﺮ ﮨﻮ ﺟﺎﺗﺎ ﮨﮯ۔

ﺑﺮﻃﺎﻧﯿﮧ ﻣﯿﮟ ﻣﻠﭩﯿﭙﻞ ﺍﺳﮑﻠﻮﺭﻭﺳﺲ

ﻧﻮﺟﻮﺍﻧﻮﮞ ﻣﯿﮟ ﭘﺎﺋﮯ ﺟﺎﻧﮯ ﻭﺍﻟﮯ

ﺩﻣﺎﻏﯽ ﺍﻣﺮﺍﺽ ﻣﯿﮟ ﺳﮯ ﺳﺐ ﺳﮯ

ﺯﯾﺎﺩﮦ ﻋﺎﻡ ﮨﮯ۔

ﺩﻧﯿﺎ ﺑﮭﺮ ﻣﯿﮟ ﺍﺱ ﻣﺮﺽ ﮐﮯ

ﺷﮑﺎﺭ ﺍﻓﺮﺍﺩ ﮐﯽ ﺗﻌﺪﺍﺩ ﺗﯿﺲ ﻻﮐﮫ

ﮨﮯ ﺟﻦ ﻣﯿﮟ ﺳﮯ ﺍﯾﮏ ﻻﮐﮫ

ﺑﺮﻃﺎﻧﯿﮧ ﻣﯿﮟ ﮨﯿﮟ۔

Share this post


Link to post
Share on other sites

اردو فن کلب کے گولڈ  ممبرز اور ماسٹر ممبرز کے لیئے ایک لاجواب تصاویری کہانی ۔۔۔۔۔ایک ہینڈسم اور خوبصورت لڑکے کی کہانی۔۔۔۔۔جو کالج کی ہر حسین لڑکی سے اپنی  ہوس  کے لیئے دوستی کرنے میں ماہر تھا  ۔۔۔۔۔کالج گرلز  چاہ کر بھی اس سےنہیں بچ پاتی تھیں۔۔۔۔۔اپنی ہوس کے بعد وہ ان لڑکیوں کی سیکس سٹوری لکھتا اور کالج میں ٖفخریہ پھیلا دیتا ۔۔۔۔کیوں ؟  ۔۔۔۔۔اسی عادت کی وجہ سے سب اس سے دور بھاگتی تھیں۔۔۔۔۔دو سو سے زائد صفحات پر مشتمل ڈاکٹر فیصل خان کی اب تک لکھی گئی تمام تصاویری کہانیوں میں سب سے طویل کہانی ۔۔۔۔۔کامران اور ہیڈ مسٹریس۔۔۔اردو فن کلب کے  گولڈ اور ماسٹر سیکشن میں  پوسٹ کی جا رہی ہے۔

Create an account or sign in to comment

You need to be a member in order to leave a comment

Create an account

Sign up for a new account in our community. It's easy!

Register a new account

Sign in

Already have an account? Sign in here.

Sign In Now
Sign in to follow this  

×
×
  • Create New...