Jump to content
Good Morning ×
URDU FUN CLUB
Sign in to follow this  
hasnain

! ’ڈرائیونگ سے بیضہ دانی کو نقصان پہنچنے کا خطرہ‘ !

Recommended Posts

ایک قدامت پسند سعودی عالم کے مطابق ڈرائیونگ کرنے والی خواتین کی بیضہ دانیوں (ovaries) کو نقصان پہنچنے کا خطرہ ہے۔
شیخ صالح کی جانب سے یہ تبصرہ اس وقت سامنے آیا ہے جب سعودی عرب میں خواتین کی ڈرائیونگ کے حق کے لیے مہم چلانے والی تنظیم ’وومن ٹو ڈرائیو‘ کے کارکن اس مہم کو تیز تر کر رہے ہیں۔
شیخ صالح نے نیوز ویب سائٹ sabq.org کو بتایا کہ اگر کوئی عورت گاڑی چلائے گی تو اس سے اس کے رحم پر اثر پڑے گا اور اس کے پیڑو کی ہڈی (pelvis) اوپر کی جانب چلی جائے گی۔
ان کا کہنا تھا کہ یہی وجہ ہے کہ جو خواتین باقاعدگی سے گاڑی چلاتی ہیں انھیں بچوں کی پیدائش کے وقت طبی مسائل کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔
اطلاعات کے مطابق شیخ صالح سعودی عرب میں خواتین کو مزید حقوق دینے کے خلاف ہیں۔
دوسری جانب سعودی عرب میں خواتین کی ڈرائیونگ کے حق کے لیے مہم چلانے والی تنظیم خواتین پر زور دے رہی ہے کہ وہ اس پابندی کی خلاف ورزی کرتے ہوئے 26 اکتوبر کو گاڑی چلائیں۔

 

 

110617121145_saudiwomendriver_304x171_bb
یہ مہم ٹوئٹر پر شروع کی گئی اور اس پر 11,000 سے زیادہ افراد کے دستخط ہیں

 

 

سعودی عرب میں خواتین کی ڈرائیونگ پر گذشتہ بیس سال سے زائد عرصے کی پابندی ہے۔
خواتین کی ڈرائیونگ پر عائد پابندی پر عمل پولیس کے ذریعے کروایا جاتا ہے جس میں جرمانہ اور گرفتاریاں شامل ہیں۔ سعودی عرب میں صرف مردوں کو ڈرائیونگ لائسنس جاری کیے جاتے ہیں۔
خیال رہے کہ سعودی عرب میں خواتین کی ڈرائیونگ کے خلاف کوئی باقاعدہ قانون نہیں ہے لیکن ملک میں خواتین کو ڈرائیونگ لائسنس کا اجرا نہیں کیا جاتا اور اس بنا پر انہیں ڈرائیونگ کرنے پر گرفتار بھی کیا جا سکتا ہے۔
آج سے ایک برس پہلے ڈرائیونگ پر لگنے والی پابندی کے خلاف سعودی خواتین نے ملک میں 20 سال سے زائد عرصے میں سب سے بڑا مظاہرہ کیا تھا۔ ان میں سے کئی خواتین کو گرفتار کیا گیا تھا اور کئی ایک کو سزائے قید دی گئی تھی۔

Share this post


Link to post
Share on other sites

اردو فن کلب کے گولڈ  ممبرز اور ماسٹر ممبرز کے لیئے ایک لاجواب تصاویری کہانی ۔۔۔۔۔ایک ہینڈسم اور خوبصورت لڑکے کی کہانی۔۔۔۔۔جو کالج کی ہر حسین لڑکی سے اپنی  ہوس  کے لیئے دوستی کرنے میں ماہر تھا  ۔۔۔۔۔کالج گرلز  چاہ کر بھی اس سےنہیں بچ پاتی تھیں۔۔۔۔۔اپنی ہوس کے بعد وہ ان لڑکیوں کی سیکس سٹوری لکھتا اور کالج میں ٖفخریہ پھیلا دیتا ۔۔۔۔کیوں ؟  ۔۔۔۔۔اسی عادت کی وجہ سے سب اس سے دور بھاگتی تھیں۔۔۔۔۔دو سو سے زائد صفحات پر مشتمل ڈاکٹر فیصل خان کی اب تک لکھی گئی تمام تصاویری کہانیوں میں سب سے طویل کہانی ۔۔۔۔۔کامران اور ہیڈ مسٹریس۔۔۔اردو فن کلب کے  گولڈ اور ماسٹر سیکشن میں  پوسٹ کی جا رہی ہے۔

Create an account or sign in to comment

You need to be a member in order to leave a comment

Create an account

Sign up for a new account in our community. It's easy!

Register a new account

Sign in

Already have an account? Sign in here.

Sign In Now
Sign in to follow this  

×
×
  • Create New...